Wednesday, August 4, 2021  | 24 Zilhaj, 1442

’مولانااسلام کی طرف دیکھیں، اسلام آباد قسمت میں نہیں‘

SAMAA | - Posted: Jan 14, 2021 | Last Updated: 7 months ago
SAMAA |
Posted: Jan 14, 2021 | Last Updated: 7 months ago

قانون ہاتھ میں لینے والوں کیخلاف ایکشن ہوگا، وفاقی وزراء

وزير داخلہ شيخ رشيد کہتے ہيں کہ پی ڈی ایم والے قانون اور آئين کے دائرے ميں احتجاج کريں تو کوئی رکاوٹ نہيں ڈالے گا، مولانا اسلام کی طرف ديکھيں ان کی قسمت ميں اسلام آباد نہيں۔ وزير قانون فروغ نسيم نے کہا قانون ہاتھ میں لیا تو ايکشن ہوگا۔

پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ نے 19 جنوری کو اسلام آباد اليکشن کميشن کے باہر احتجاج کا اعلان کر رکھا ہے۔ حکومت نے اپوزیشن کو احتجاج کی اجازت دے دی۔

اسلام آباد ميں 5 بڑے وزراء نے پريس کانفرنس کرتے ہوئے پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ کو تنقید کا نشانہ بنایا۔ وزیر داخلہ شيخ رشيد احمد نے کہا کہ پی ڈی ایم کو بھی حکومت کی نيک دلی کا احترام کرنا ہوگا، فارن فنڈنگ کيس چل رہا ہے، اس لئے ہم اُن کے راستے ميں کوئی رکاؤٹ نہيں بنيں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ قانون اور آئين کے دائرے ميں رہ کر اپنا احتجاج کريں، فضل الرحمان سے کہوں گا وہ عالم دين ہيں اسلام کی طرف ديکھيں، اسلام آباد ان کے نصيب ميں نہيں۔

وزير اطلاعات شبلی فراز نے کہا کہ اپوزيشن شوق سے آئے مگر فارن فنڈنگ کے جوابات ساتھ لائے، پيپلزپارٹی اور نون ليگ سے درخواست ہے کہ وہ آکر اپنے ثبوت بھی پيش کريں، رسيديں شناختی کارڈ جو فنڈنگ کی ہوئی ہے، اس کے جوابات بھی لائيں۔

فروغ نسيم نے قانون کی خلاف ورزی پر ايکشن کی وارننگ دیدی، بولے کہ قانون اور آئين کے مطابق اپوزيشن اپنا احتجاج کرے ليکن اگر قانون کی خلاف ورزی ہوئی تو پھر قانون ايکشن لے گا۔

فواد چوہدری کا کہنا تھا اپوزيشن نے کوئی ادارہ نہيں چھوڑا، سب کو تنقيد کا نشانہ بنايا، کسی کو تو محفوظ رہنے ديں۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube