Sunday, January 16, 2022  | 12 Jamadilakhir, 1443

پروین رحمان قتل: دونوں جےآئی رپورٹس ریکارڈ کاحصہ بنانے کاحکم

SAMAA | - Posted: Jan 4, 2021 | Last Updated: 1 year ago
Posted: Jan 4, 2021 | Last Updated: 1 year ago

Parwee Rahman

سپریم کورٹ نے سماجی کارکن پروین رحمان کے قتل سے متعلق دونوں جے آئی رپورٹس ریکارڈ کا حصہ بنانے کا حکم ديتے ہوئے ازخود نوٹس نمٹا ديا۔

پیر 4جنوری کو پروین رحمان قتل کے ازخود نوٹس کیس کی سماعت ہوئی۔ جسٹس عمر عطا بندیال کی سربراہی میں تین رکنی بنچ نے سماعت کی۔

سپریم کورٹ نے دونوں جے آئی رپورٹس کو ریکارڈ کا حصہ بنانے کا حکم دیتے ہوئے کہا کہ 2ہفتوں میں جے آئی ٹی رپورٹس ٹرائل کورٹ میں پیش کی جائیں۔

پروین رحمان قتل،عدالت نے کیس 2 ماہ میں نمٹانے کا حکم دیدیا

جج عمر عطاء بندیال نے حکم سناتے ہوئے کہا کہ تفصیلی فیصلہ بعد میں جاری کيا جائے گا۔

سپریم کورٹ نے پر سکیوشن اور گواہان کی سیکیورٹی سے متعلق عبوری حکم نامہ بھی برقرار رکھا ہے۔ ہدایت کی کہ ٹرائل کورٹ جلد از جلد مقدمہ کو نمٹانے کی کوشش کرے۔

واضح رہے کہ اورنگی پائیلٹ پراجیکٹ کی ڈائریکٹر پروین رحمان کو سال 2013 میں کراچی کے علاقے منگھوپیر میں موٹر سائیکل سوار مسلح افراد نے فائرنگ کرکے قتل کیا، جب وہ دفتر سے اپنے گھر واپس جا رہی تھیں۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube