Saturday, September 18, 2021  | 10 Safar, 1443

اسلام آباد پولیس کے ہاتھوں نوجوان کا قتل، جوڈیشل انکوائری کاحکم

SAMAA | - Posted: Jan 2, 2021 | Last Updated: 9 months ago
SAMAA |
Posted: Jan 2, 2021 | Last Updated: 9 months ago

چیف کمشنر اسلام آباد نے اسلام آباد میں پولیس فائرنگ سے جاں بحق نوجوان کے اہل خانہ سے مذاکرات کے بعد واقعے کی جوڈیشل انکوائری کا حکم دے دیا۔ انکوائری 5 دن کے اندر مکمل کی جائے گی۔

اسلام آباد پولیس نے جمعہ اور ہفتہ کی درمیانی شب سیکٹر جی 10 میں ایک کار پر فائرنگ کرتے ہوئے اسامہ ستی نامی نوجوان کو قتل کردیا تھا۔ پولیس کا موقف ہے کہ وہ ڈکیتی کی اطلاع ملنے پر کار کا تعاقب کر رہے تھے۔ مقتول نے کار نہیں روکی تو اس پر فائرنگ کردی۔

مقتول کے اہل خانہ کا موقف ہے کہ اسامہ ستی نے بینک سے قرض لیکر کار خریدی اور اس میں ٹیکسی چلاکر اخراجات پورے کرتا تھا۔

مقتول کے اہل خانہ نے ہفتے کی شام لاش کو کشمیر ہائی وے پر رکھ کر احتجاج کیا۔ اس دوران ضلعی انتظامیہ اور پولیس حکام مذاکرات کیلئے آئے تو اہل خانہ نے موقف اختیار کیا کہ ’قاتلوں‘ سے مزاکرات نہیں کریں گے۔‘

یہ بھی پڑھیں: اسلام آباد: پولیس کی فائرنگ سے نوجوان قتل

بعد ازاں اعلیٰ حکام مذاکرات کیلئے آئے اور اہل خانہ سے مذاکرات کے بعد چیف کمشنر اسلام آباد عامر احمد علی نے جوڈیشل انکوائری کا حکم دیدیا۔ ایڈیشنل ڈسٹرکٹ مجسٹریٹ رانا محمد وقاص انور واقعہ کی انکوئری کریں گے اور انکوائری رپورٹ 5 دن میں جمع کروائی جائے گی۔

جوڈیشل انکوائری کی یقین دہانی کے بعد لواحقین سمیت بڑی تعداد میں شہریوں نے کشمیر ہائی وے پر ہی مقتول کی نماز جنازہ ادا کی اور تدفین کیلئے لے گئے۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube