Thursday, September 23, 2021  | 15 Safar, 1443

ڈینیئل پرل قتل کیس: ملزمان ہفتہ کو رہا ہونگے، وکیل

SAMAA | and - Posted: Dec 24, 2020 | Last Updated: 9 months ago
Posted: Dec 24, 2020 | Last Updated: 9 months ago

سندھ ہائی کورٹ نے امریکی صحافی ڈئینیل پرل قتل کیس میں احمد عمر شیخ سمیت 4 ملزمان کی نظر بندی کا نوٹیفکیشن کالعدم قرار دیتے ہوئے ملزمان کو فوری طور پر جیل سے رہا کرنے کا حکم دے دیا۔ وکیل کے مطابق جیل حکام کا کہنا ہے کہ عدالتی احکامات کی تصدیق کے بغیر کسی کو رہا نہیں کرسکتے۔ واضح رہے کہ جمعہ کو 25 دسمبر کی عام تعطیل کے باعث اب احکامات کی تصدیق ہفتہ 26 دسمبر کو ہی ہوسکے گی۔

جمعرات 24 دسمبر کو احمد عمر شیخ و دیگر کی بریت کے بعد نظر بندی کے خلاف درخواست کی سماعت ہوئی۔

عدالت نے احمد عمر شیخ سمیت تمام ملزمان کا نام ای سی ایل میں شامل کرنے کا بھی حکم دیا۔ عدالت نے حکم دیا کہ ملزمان کو جب عدالت طلب کرے گی تو پیش ہوں۔

عدالت نے ریمارکس دیے کہ ملزمان بغیر کسی جرم کے 18 سال سے جیل میں ہیں۔

دیگر ملزمان میں فہد نسیم، سید سلمان ثاقب اور شیخ محمد عادل شامل ہیں۔ انسداد دہشت گردی عدالت نے احمد عمر شیخ کو سزائے موت سنائی تھی جبکہ دیگر 3 ملزمان کو عمر قید کی سزا سنائی تھی۔

سندھ ہائی کورٹ نے تمام سزا کے خلاف اپیل منظور کرتے ہوئے بری کر دیا تھا۔

اسسٹنٹ اٹارنی جنرل کے مطابق ملزمان کی نظر بندی کا اختیار صوبائی حکومت کا ہے اور محکمہ داخلہ نے 28 ستمبر کو ملزمان کو اے ٹی اے کی سیکشن ای ای ای 11 کے تحت نظر بند کیا تھا۔

ڈینیئل پرل قتل کیس میں 18 سال سے قید عمر شیخ، عادل شیخ سمیت ملزمان کے وکلاء عدالتی احکامات کی کاپی لے کر جیل پہنچے تھے، ان کے ہمراہ ملزمان کے اہل خانہ بھی تھے۔

عمرشیخ آج یا کل گھر میں ہوں گے، اہل خانہ

دوسری جانب جیل حکام نے عمر شیخ کے اہل خانہ کو بتایا ہے کہ جس وقت بھی عدالتی حکم نامہ موصول ہوجائے، انہیں رہا کردیا جائے گا۔

عمر شیخ کے بھائی شیخ اسلم نے سماء ڈیجیٹل کو بتایا کہ عدالت نے آج رہائی کے واضح احکامات دیے ہیں۔ اب تحریری حکمنامہ حاصل کرکے جیل جائیں گے اور آج یا کل عمر شیخ گھر میں ہوں گے۔

ملزمان کے وکیل ندیم احمد شیخ نے بتایا کہ جیل حکام نے کہا ہے کہ عدالتی احکامات کی تصدیق کے بغیر کسی کو رہا نہیں کرسکتے، احکامات کی تصدیق اب ہفتہ کو ہی ہوسکے گی کیونکہ 25 دسمبر کو عام تعطیل ہے، جس کے بعد چاروں افراد کو رہا کیا جائے گا۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube