Sunday, November 28, 2021  | 22 Rabiulakhir, 1443

پشاور: بروقت آکسیجن نہ ملنے پرکرونا کے7 مریض جاں بحق

SAMAA | and - Posted: Dec 6, 2020 | Last Updated: 12 months ago
Posted: Dec 6, 2020 | Last Updated: 12 months ago

پشاور: اسپتال کے باہر کا منظر

خیبر پختونخوا کے صوبائی دارالحکومت پشاور میں اسپتال میں زیر علاج کرونا کے 7 مریض آکسیجن نہ ملنے کے باعث انتقال کرگئے۔  معاملے کی تحقیقات کیلئے انکوائری کمیٹی تشکیل دے دی گئی ہے۔

واقعہ تدریسی اسپتال خیبر ٹیچنگ اسپتال میں گزشتہ رات 5 دسمبر کو پیش آیا۔ اسپتال انتظامیہ کے مطابق کرونا کے مریضوں کیلئے آکسیجن کی سپلائی راولپنڈی سے آتی ہے، تاہم سپلائی مقررہ وقت اور تعداد میں نہ ملنے کے باعث واقعہ رونما ہوا۔

ايک گھنٹے کے اندر اندر مريض جاں بحق ہوئے۔ آکسیجن کی کمی سے دیگر وارڈز کے مریض بھی متاثر ہوئے ہیں۔

وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا نے واقعہ پر شدید برہمی کا اظہار کرتے ہوئے ذمہ داران کے خلاف کارروائی کا حکم دے دیا۔

واقعہ سے متعلق صوبائی وزیر صحت تیمور جھگڑا کا کہنا ہے کہ اسپتال کی بورڈ آف گورنرز کو 48 گھنٹے کے اندر انکوائری رہورٹ جمع کرنے کی ہدات کردی ہے۔

سما سے گفتگو میں ان کا کہنا تھا کہ انکوائری رپورٹ پبلک کی جائے گی، تاہم قیاس آرائیوں اور افواہوں سے گُریز کیا جائے۔ بعد ازاں خیبر ٹیچنگ کے بورڈ آف گورنرز نے اسپتال میں آکسیجن کے معاملے پر انکوائری کمیٹی تشکیل دے دی۔ بی او جی نے سینیر ڈاکٹر روح المقیم کی سربراہی انکوائری کمیٹی تشکیل دی۔

ڈاکٹر طاہر ندیم کے مطابق انکوائری کمیٹی میں ڈاکٹر روح المقیم ، ڈاکٹر فرمان اور ڈاکٹر سعود مالک شامل ہیں۔ کمیٹی 48 گھنٹوں میں اپنی رپورٹ پیش کریگی۔

دوسری جانب صوبائی وزیر کامران بنگش کا کہنا ہے کہ تمام معاملات عوام کے سامنے لائیں گے۔ وزیر محنت خیبر پختونخوا شوکت یوسف زئی کا کہنا ہے کہ محکمہ صحت کو الرٹ رہنا ہوگا۔ ذمے داروں کے خلاف ايکشن ليا جائے گا۔ آکسيجن کی کمی سے اموات ناقابل برداشت ہے۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube