Wednesday, October 20, 2021  | 13 Rabiulawal, 1443

پاکستان:کروناویکسین کی آزمائش:رضاکاروں کو50 ڈالربھی دیئے جائینگے

SAMAA | - Posted: Nov 27, 2020 | Last Updated: 11 months ago
SAMAA |
Posted: Nov 27, 2020 | Last Updated: 11 months ago

اسلام آباد اسپتال کا ایک منظر: بشکریہ اے ایف پی

کرونا وائرس سے بچاؤ کیلئے چین میں بنائی گئی ویکسین کی آزمائشی جانچ کیلئے ہزاروں افراد اسپتال پہنچ گئے۔ جہاں اس ویکسین کے آزمائش کرنے والوں کو 50 امریکی ڈالر بھی دیئے جائیں گے۔

فرانسیسی خبر رساں ادارے کی جانب سے جاری اطلاعات کے مطابق چین کی بنائی گئی کرونا ویکسین کے آخری مرحلے کی آزمائش میں پاکستان میں شروع کردی گئی ہے۔

پاکستان میں یہ ویکسین اسلام آباد کے شفا انٹرنیشنل اسپتال میں ایسے رضاکاروں کو دی جا رہی ہے، جنہوں نے اس آزمائشی ویکسین کیلئے خود کو پیش کرنے کی درخواست دی۔

چین کی تیار کردہ اس ویکسین کی آزمائش کے لیے ہزاروں پاکستانی رضاکاروں نے اندراج کرایا ہے، ویکسین آزمائش میں شامل رضاکاروں کو 50 ڈالر دیے جا رہے ہیں۔ شفا اسپتال کے ریسرچر اعجاز احمد خان کا کہنا ہے کہ ویکسین کے نتائج 2 سے 3 ماہ میں ملنے کی توقع کی جارہی ہے۔

حکام کی جانب سے اس آزمائش میں حصہ لینے والوں کو 50 امریکی ڈالر اس لیئے دیئے جائیں گے تاکہ اگر ویکسین سے کوئی ری ایکشن ہوتا ہے تو وہ اپنا علاج کراسکیں۔

یہاں یہ بات بھی قابل ذکر ہے کہ چین کی تیار کردہ یہ کرونا ویکسین بیجنگ انسٹی ٹیوٹ اور چینی دوا ساز کمپنی کے اشتراک سے بنائی جارہی ہے۔ یہ پہلا موقع ہے کہ جب پاکستان کی جانب سے پہلی بار کرونا ویکسین کے ٹرائل میں حصہ لیا گیا۔

اسپتال کے احاطے میں موجود ایک رضا کار نے اے ایف پی سے گفتگو میں بتایا کہ وہ اپنی خوشی سے اس عمل میں شامل ہوا ہے۔ یہ ایک نیک کام ہے، جس میں دوسرے لوگوں کو بھی آگے آنا چاہئیے۔

رپورٹ کے مطابق اب تک 7000 سے 10 ہزار افراد اس ویکسین کی آزمائش کیلئے رابطہ کرچکے ہیں۔ یہ ویکسین 3 مراحل میں لوگوں کو لگائی جائے گی۔

قبل ازیں 4 دوا ساز کمپنیوں کی جانب سے اس بات کا دعویٰ کیا گیا تھا کہ انہوں نے ایسی ویکسین تیار کی ہے، جو کرونا وائرس کے خلاف مؤثر ثابت ہوگی۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube