Saturday, November 28, 2020  | 11 Rabiulakhir, 1442
ہوم   > پاکستان

کراچی: جعلی مقابلے پر پولیس اہلکار کو سزائے موت

SAMAA | - Posted: Nov 21, 2020 | Last Updated: 7 days ago
SAMAA |
Posted: Nov 21, 2020 | Last Updated: 7 days ago

کراچی کی انسداد دہشت گردی عدالت نے 2018ء میں جعلی پولیس مقابلے میں شہری کی ہلاکت کا جرم ثابت ہونے پر پولیس اہلکار کو سزائے موت سنادی۔

کراچی میں پولیس کی جانب سے انکاؤنٹر قرار دیا جانیوالا واقعہ شاہ فیصل کالونی کے علاقے میں 18 جنوری 2018ء کو پیش آیا تھا، جس میں مقصود نامی نوجوان رکشہ ڈرائیور پولیس فائرنگ سے جاں بحق ہوگیا تھا۔

پولیس کی جانب سے دعویٰ کیا گیا تھا کہ پولیس اور ڈاکوؤں کے درمیان فائرنگ کے تبادلے میں مقصود جاں بحق ہوا تھا۔

ویڈیو: مقصود کی بہن بےنظیرکاچیف جسٹس سےانصاف کامطالبہ

ہفتہ کو انسداد دہشت گردی کی عدالت نے واقعے کو جعلی پولیس مقابلہ قرار دیتے ہوئے ایک پولیس افسر اے ایس آئی طارق کو پاکستان پینل کوڈ کی دفعہ 302 (قتل) کے تحت سزائے موت سنادی۔

واقعے میں ملوث دیگر تین پولیس اہلکاروں عبدالوحید، شوکت علی اور اکبر خان کو شک کا فائدہ دے کر بری کردیا گیا۔

اے ٹی سی نے اے ایس آئی طارق پر دو لاکھ روپے جرمانہ بھی عائد کیا۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube