Monday, January 18, 2021  | 3 Jamadilakhir, 1442
ہوم   > پاکستان

نوازشریف کیخلاف قتل کا کیس 6 سال بعد خارج

SAMAA | - Posted: Nov 5, 2020 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: Nov 5, 2020 | Last Updated: 2 months ago

پی ٹی آئی اور عوامی تحریک کے 2014ء کے دھرنے کے دوران 2 کارکنوں کی اموات ہوئی تھیں، جس پر پاکستان تحریک انصاف کے رہنماء شاہ محمود قریشی نے نواز شریف اور چوہدری نثار کیخلاف مقدمہ درج کرایا تھا۔ عدالت نے 6 سال بعد مدعی کی عدم پیروی پر کیس خارج کردیا۔

عام انتخابات کے بعد 30 اگست 2014ء کی رات دھرنے پر بیٹھی تحریک انصاف اور پاکستان عوامی تحریک کی پارلیمنٹ اور وزیراعظم ہاؤس کی جانب پیشقدمی پر پولیس کیساتھ تصادم میں 2 کارکنان کی جان گئی تھی۔

پی ٹی آئی کے شاہ محمود قریشی نے قتل کا مقدمہ اس وقت کے وزیراعظم نواز شریف اور وزیر داخلہ چوہدری نثار کیخلاف درج کرایا، 6 سال بعد مدعی کی عدم پیروی پر مقدمہ خارج کردیا گیا۔

انسداد دہشتگردی عدالت کے جج راجہ جواد عباس نے مقدمہ خارج کرنے کا فیصلہ سنایا۔ پولیس کی جانب سے عدالت میں رپورٹ پیش کرتے ہوئے کہا گیا تھا کہ مدعی مقدمہ نہ اس کیس کی پیروی کررہے ہیں، نہ ہی کوئی شواہد فراہم کئے، کیس کو مزید چلانے کا کوئی مقصد نہیں، خارج کیا جائے۔

اس وقت کی حکومتی جماعت مسلم لیگ ن نے کارکنان کی موت کا ذمہ دار بھی پی ٹی آئی قیادت کو ہی قرار دیا تھا، پارلیمنٹ حملہ کیس میں قتل کی دفعات بھی شامل کی گئی تھیں تاہم عمران خان اس کیس میں پہلے ہی بری ہو چکے، عدالت ایف آئی آر کی صحت پر بھی سوالات اٹھا چکی ہے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube