Thursday, December 3, 2020  | 16 Rabiulakhir, 1442
ہوم   > پاکستان

سندھ: فی من گندم کی قیمت میں 600روپے اضافہ

SAMAA | - Posted: Oct 29, 2020 | Last Updated: 1 month ago
SAMAA |
Posted: Oct 29, 2020 | Last Updated: 1 month ago
Wheat flour

فوٹو: آن لائن

سندھ کابينہ نے وفاق کی تجويز مسترد کرتے ہوئے فی من گندم کی قيمت ميں 600 روپے کا اضافہ کر ديا۔

جمعرات 29 اکتوبر کو صوبائی کابينہ نے فی من گندم کے ريٹ 1600 روپے مقرر کرنے کی وفاقی حکومت کی تجويز مسترد کر دی۔ گندم میں 600 روپے اضافے سے قیمت 2000 روپے مقرر کر دی گئی۔

صوبائی وزير زراعت اسماعيل راہو نے وفاق کی پاليسی کو کسان دشمن قرار ديا۔

وزير اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے وفاق پر تنقيد کرتے ہوئے کہا کہ بيرون ملک سے درآمد کم معيار کی گندم پر زيادہ رقم خرچ کی جا رہی ہے ليکن مقامی کاشتکاروں کو فائدہ نہيں پہنچايا جا رہا۔

کراچی میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ترجمان سندھ حکومت مرتضیٰ وہاب نے کہا کہ خود کو زرعی ملک کہتے ہیں مگر چینی اور گندم امپورٹ کر رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ملک اس وقت گندم کے بحران کا شکار ہے اور وفاقی حکومت مہنگے داموں میں گندم امپورٹ کر رہی ہے۔ پیپلزپارٹی کے دور حکومت میں گندم کا بحران نہیں تھا۔

صوبائی کابینہ نے گنے کی فی من قيمت بھی 202 روپے مقرر کر دی۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube