Thursday, December 3, 2020  | 16 Rabiulakhir, 1442
ہوم   > پاکستان

وزیراعظم کا پنجاب میں ہیلتھ کارڈ دینے کا اعلان

SAMAA | - Posted: Oct 28, 2020 | Last Updated: 1 month ago
SAMAA |
Posted: Oct 28, 2020 | Last Updated: 1 month ago

وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ خیبرپختونخوا کی طرح پنجاب میں بھی تمام شہریوں کو ہیلتھ کارڈ دیے جائیں گے اور ایک سال کے اندر پورے پنجاب میں یہ عمل مکمل کیا جائے گا۔

لاہور میں ایوان اقبال میں انصاف ڈاکٹرز فورم کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم نے کہا کہ پنجاب کی وزیر صحت ڈاکٹر یاسمین راشد کو ہدایت کی ہے کہ شہریوں کو انصاف ہیلتھ کارڈ جاری کرنے پر کام شروع کریں۔ اس میں بیواؤں اور خواجہ سراؤں کو ترجیحی بنیادوں پر شامل کیا جائے اور ایک سال کے اندر اس کا دائرہ کار پورے پنجاب میں پھیلایا جائے۔

وزیراعظم نے کہا کہ ہیلتھ کارڈ سے اسپتالوں میں امیر اور غریب کا فرق مٹ جائے گا۔ اس کے ساتھ ملک بھر کے دور دراز علاقوں میں بھی پرائیویٹ اسپتال کھل جائیں گے۔ پرائیویٹ سیکٹر کی حوصلہ افزائی کے لیے متروکہ وقف املاک کی اراضی اسپتالوں کو ریاعتی قیمت پر دی جائے گی۔

عمران خان نے کہا کہ اس کے ساتھ ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی میں اصلاحات لائیں گے جس کے باعث فارما انڈسٹری ترقی کرے گی۔ ادویات کی قیمتیں کم اور معیار بڑے گا۔ اسپتالوں کیلئے آلات کی درآمد پر ٹیکسز کا خاتمہ کریں گے۔

وزیراعظم نے شعبہ صحت میں اصلاحات کا عزم دہراتے ہوئے کہا کہ اسپتالوں میں بھی چھوٹے چھوٹے مافیا بیٹھے ہیں جو ذاتی مفادات کے لیے سسٹم کو ٹھیک نہیں ہونے دیتے۔ لیکن اب تبدیلی آگئی ہے۔ خیبرپختونخوا کے اسپتالوں کو بین الاقوامی معیار کے مطابق لاکھڑا کیا ہے۔ اب پورے پاکستان کے اسپتالوں میں اصلاحات لائیں گے۔

اپوزیشن کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ سارے جیب کترے ایک اسٹیج پر کھڑے ہوکر کہتے ہیں ملک تباہ و برباد ہوگیا۔ ان کو پتہ چل گیا کہ ایسا وزیراعظم آیا ہے جو بلیک میل نہیں ہوگا۔ پاکستان کیلئے یہ فیصلہ کن وقت ہے۔ ان لوگوں نے30  سال باریاں لی ہیں۔ اب یہ تبدیلی سے ڈر رہے ہیں کیوں کہ انہوں نے جیلوں میں جانا ہے۔

مغربی ممالک میں بڑھتے ہوئے اسلاموفوبیا پر بات کرتے ہوئے وزیراعظم نے کہا کہ اسلامی ریاستوں کے سربراہان کو خطوط لکھے ہیں کہ ہمیں سب نے مل کر مغرب کو سمجھانا ہے کہ مقدس ہستیوں کی شام میں گستاخی سے مسلمانوں کو کتنی تکیلف ہوتی ہے۔ مغربی ممالک کے لوگ اس بات کو نہیں سمجھتے۔

انہوں نے کہا کہ ہم نے مغرب کو سمجھانا ہے کہ ہولوکاسٹ پر آپ اتنے حساس ہیں، اس پر ہونا بھی چاہیے لیکن مسلمانوں کیلئے بھی اتنا ہی حساس ہونا پڑے گا۔ ہم اپنی مقدس ہستیوں کی شان میں گستاخی برداشت نہیں کرسکتے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube