Saturday, November 28, 2020  | 11 Rabiulakhir, 1442
ہوم   > پاکستان

کیپٹن (ر) صفدر کراچی میں گرفتار

SAMAA | - Posted: Oct 19, 2020 | Last Updated: 1 month ago
SAMAA |
Posted: Oct 19, 2020 | Last Updated: 1 month ago

مقدمے میں 200 افراد نامزد

مریم نواز شریف نے اپنی ٹوئٹ میں کہا ہے کہ کیپٹن ریٹائرڈ صفدر کو کراچی میں گرفتار کرلیا گیا ہے۔ کیپٹن صفدر اعوان کو نجی ہوٹل سے گرفتار کیا گیا۔

سماجی رابطے کی مائیکرو بلاگنگ سائٹ پر پاکستان مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز شریف کا کہنا تھا کہ محمد صفدر کو ہوٹل کے کمرے کا دروازہ توڑ کر گرفتار کیا گیا۔ محمد صفدر کی گرفتاری پر مريم صفدر کی جانب سے وزيراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ سے رابطہ کیا گیا۔ مریم صفدر کا کہنا تھا کہ ہم تو مہمان بن کر آئے تھے يہ کيا ہوا ؟۔ وزيراعلیٰ سندھ نے پوليس سے رابطہ کرکے صورت حال معلوم کی۔

منظر عام پر آنے والی ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ پولیس کیپٹن (ر) صفدر کو گاڑی میں بٹھا کر تھانے لے گئی۔ گرفتاری کے وقت بھی محمد صفدر کی جانب سے "ووٹ کو عزت دو، مادر ملت زندہ باد ایوب مارشل لا مردہ باد" کے نعرے لگائے گئے۔

کیپٹن صفدر کو گرفتاری کے بعد عزیز بھٹی پارک منتقل کردیا گیا۔ منتقلی کے بعد پولیس اسٹیشن کے دروازے بند کردیئے گئے اور پولیس کی جانب سے کسی کو تھانے کے اندر جانے کی اجازت نہیں دی گئی۔ محمد صفدر کی گرفتاری کی اطلاع ملنے پر ن لیگی عہدے دارے بھی تھانے پہنچے، تاہم پولیس نے کسی کی محمد صفدر سے ملاقات نہیں کرائی۔

واضح رہے پاکستان تحریک انصاف کے رہنماؤں کی درخواست پر کیپٹن (ر) صفدر، مریم صفدر سمیت 200 لیگی کارکنوں کے خلاف برگیڈ تھانے میں مقدمہ درج کیا گیا۔ پولیس کے مطابق مقدمہ قائداعظم مزار پروٹیکشن ایکٹ کی دفعہ 6،8 اور 10 کے تحت درج کیا گیا ہے۔ مقدمے میں جان سے مارنے کی دھمکی، مزار قائد ایکٹ کی خلاف ورزی اور سرکاری املاک کو نقصان پہنچانے کی دفعات شامل کی گئی ہیں۔

کراچی میں 18 اکتوبر کی شام مزار قائد پر کیپٹن ریٹائرڈ صفدر نے نعرے لگا کر مزار قائد کا تقدس پامال کیا تھا۔ رہنما ن لیگ مریم نواز کی مزار قائد اعظم پر حاضری کے موقع پر کیپٹن ریٹائرڈ صفدر نے ’’ووٹ کو عزت دو اور مادر ملت زندہ باد ‘‘ کے نعرے لگوا ئے تھے۔ مقدمہ وقاص نامی شہری کی مدعیت میں درج کیا گیا ہے۔

مقدمہ وقاص نامی شہری کی مدعیت میں درج کیا گیا۔ دوسری جانب تحریک انصاف کے رہنما حلیم عادل شیخ نے کیپٹن (ر) صفدر کو فوری گرفتار کرنے کا مطالبہ کیا تھا۔

ادھر پی ٹی آئی رہنما خرم شیر زمان نے کہا کہ ہم پاکستان کی حفاظت کے لیے موجود ہیں۔ کوئی بھی کراچی آئے مزارقائد پر حاضری اور دعا کرے لیکن اجازت نہیں دینگے کہ کوئی مزار پر ایسی ویسی حرکت کرے۔

علاوہ ازیں وزیر اطلاعات شبلی فراز نے کہا ہے کہ مزار کو سیاست کے لیے استعمال کرنا قابل مذمت ہے جبکہ وفاقی وزیر فواد چوہدری کا کہنا تھا کہ کیپٹن ریٹائرڈ صفدر اور مریم نواز کو اپنے اس اقدام پر معافی مانگنی چاہیے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube