Saturday, November 28, 2020  | 11 Rabiulakhir, 1442
ہوم   > پاکستان

سوات میں زیتون کی کاشت کا موسم

SAMAA | - Posted: Oct 17, 2020 | Last Updated: 1 month ago
SAMAA |
Posted: Oct 17, 2020 | Last Updated: 1 month ago

پانچ سال بعد پھل دینا شروع کرتا ہے

وادی سوات میں جنگلی زیتون کے درختوں سے فائدہ اٹھا کر پودوں کی پيوند کاری کا تجربہ کرليا گيا۔

نواحي علاقے نجی گرام کے مقامی زمیندار شہاب کا کہنا ہے کہ سالوں پہلے لگائے گئے پودے مفيد ثابت ہونے لگے ہیں اور بارانی علاقوں میں بہترین نتائج آرہے ہیں۔ پانچ سال بعد پھل دینا شروع کر دیتا ہے اس لیے حکومت کو چاہيئے زمینداروں کو سہولت دے۔

جدید طریقے سے زيتوں کا تیل نکالنے کی مشین کے ذريعے 10 سے 15 کلو کے پھل سے ایک لیٹر تیل نکالا جاتا ہے۔

ماہر ڈاکٹر محمد فیاض کہتے ہیں کہ اگر زمیندار اپنے باغات میں اربیکونا، اربوسونا، کورنیکی اور گورنٹانیا لگائے تو اس کی پیدواری صلاحیت بڑھ جائے گی۔ ہم نہ صرف پاکستان بلکہ برآمد بھی کرنے کے قابل ہو جائيں گے۔

ڈاکٹر محمد فیاض کے مطابق ماحول دوست زیتون کے پودوں کی تعداد بڑھا دی جائے تو 300 سال تک ان پودوں کے پھل سے آمدنی حاصل کی جاسکتی ہے۔

ماہرين کا کہنا ہے کہ زمين داروں کو سہوليات دی جائيں تو زيتون کے باغات کی کاشت زرمبادلہ کمانے ميں کارآمد ثابت ہوسکتی ہے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube