Sunday, November 28, 2021  | 22 Rabiulakhir, 1443

افغان مہاجرین سیکرٹریٹ کےملازمین کو مستقل کرنے کا فیصلہ کالعدم

SAMAA | - Posted: Oct 15, 2020 | Last Updated: 1 year ago
Posted: Oct 15, 2020 | Last Updated: 1 year ago

سپریم کورٹ نے افغان مہاجرین  سیکرٹریٹ کے ملازمین کو مستقل کرنے کا فیصلہ کالعدم قرار دے دیا۔عدالت نےمعاملہ دوبارہ فیصلے کیلئے پشاور ہائیکورٹ کو بھیج دیا۔

جمعرات کو چیف جسٹس کی سربراہی میں تین رکنی بینچ نے کیس کی سماعت کی۔ ملازمین کے وکیل نے کہا کہ افغان مہاجرین کو سروس کرتےہوئے پنتیس سے چالیس  سال ہوچکے ہیں۔

جسٹس اعجازالاحسن نےریمارکس دیئے کہ ملازمین کوتنخواہ اقوام متحدہ سے ملتی ہے،منصوبہ پانچ سال چلے یا پچاس سال، سوال فنڈنگ کا ہے،اقوام متحدہ  فنڈز دینا روک دے تو منصوبہ ختم ہو جائے گا،ہائیکورٹ ملازمین کو مستقل کرنے کا حکم حکومت کو کیسے دے سکتی ہے۔

ایڈیشنل اٹارنی جنرل سہیل محمود نے کہا کہ پشاور ہائیکورٹ کا فیصلہ تضادات سے بھر پورہے ۔

سپریم کورٹ نے عدالت عالیہ کا فیصلہ کالعدم قرار دیتے ہوئے معاملہ دوبارہ پاشاور ہائی کورٹ کو بھیج دیا۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube