Thursday, December 3, 2020  | 16 Rabiulakhir, 1442
ہوم   > پاکستان

مولانا عادل قومی وحدت کیلئے کام کررہے تھے، مفتی تقی عثمانی

SAMAA | - Posted: Oct 10, 2020 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: Oct 10, 2020 | Last Updated: 2 months ago

مولانا عادل کا قتل قومی سانحہ ہے، عالم دین

مفتی تقی عثمانی نے مولانا عادل کے قتل کو قومی سانحہ قرار دے دیا، ان کا کہنا ہے کہ مولانا عادل قومی وحدت کیلئے کام کررہے تھے، وہ چاہتے تھے کہ فرقہ وارادنہ فسادات سر نہ اٹھائیں۔

کراچی کے علاقے شاہ فیصل کالونی میں دارالعلوم کراچی کے استاد اور جامعہ فاروقیہ حب کے مہتمم مولانا عادل کو نامعلوم موٹر سائیکل سواروں نے فائرنگ کرکے شہید کردیا، واقعے میں ان کا ڈرائیور بھی جاں بحق ہوگیا۔

پولیس کا کہنا ہے کہ مولانا عادل کو قتل کرنیوالا ملزم سڑک کی دوسری طرف سے پیدل آیا، گولیاں چلائیں اور واپس بھاگ گیا۔

مزید جانیے : کراچی میں کار پر فائرنگ، مولانا عادل ڈرائیور سمیت جاں بحق

سماء سے گفتگو کرتے ہوئے دارالعلوم کراچی کے سربراہ مفتی تقی عثمانی نے واقعے پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ مولانا عادل واقعے سے آدھا گھنٹہ قبل ان سے مل کر گئے تھے۔

مولانا عادل کے قتل کو بڑا قومی سانحہ قرار دیتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ وہ قومی وحدت کیلئے کام کررہے تھے، مولانا عادل چاہتے تھے کہ ملک میں فرقہ وارانہ فسادات سر نہ اٹھائيں۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube