Tuesday, October 20, 2020  | 2 Rabiulawal, 1442
ہوم   > پاکستان

بچوں کی صحت پرکسی قسم کاسمجھوتہ نہیں کرینگے،وزیرتعلیم

SAMAA | - Posted: Sep 26, 2020 | Last Updated: 3 weeks ago
SAMAA |
Posted: Sep 26, 2020 | Last Updated: 3 weeks ago

ایس اوپیزپرعملدرآمدکی ہدایات کی گئی۔

وزیرتعلیم سعیدغنی نے کہا ہے کہ اسکول جانے والے بچوں کی صحت پرکسی قسم کاسمجھوتہ نہیں کرینگے۔

ہفتے کوکراچی میں وزیرِتعلیم سندھ کی زيرِصدارت پرائیویٹ اسکولزایسوسی ایشنزکااجلاس ہوا۔اجلاس میں 28ستمبرسےتعلیمی سرگرمیوں کےشروع ہونے کےحوالے سے تبادلہ خیال کیا گیا۔سرکاری ونجی تعلیمی اداروں کوایس اوپیزپرعملدرآمدکی ہدایات کی گئی۔

وزیرتعلیم سعید غنی نے واضح کیا کہ ایس اوپیزپرمکمل عمل نہ کرنيوالوں کيخلاف سخت کارروائی ہوگی،ہمارااولین مقصد بچوں کواس وبا سے بچانا ہے۔سعیدغنی نےواضح کردیا کہ بچوں کی صحت پرکسی قسم کاسمجھوتہ نہیں کرینگے۔

سعیدغنی نے کہا کہ کچھ نجی تعلیمی اداروں میں حکومت کے واضح احکامات کے باوجود چھوٹے بچوں کی تعلیمی سرگرمیاں شروع کردی تھی، جس پر ان کے خلاف کارروائی کی گئی۔

پرائیویٹ اسکولزکی جانب سے بتایا گیا کہ ایس اوپیزپرعمل شروع کردیا گیا ہے،اسکولزایسوسی ایشن کے تحت مانیٹرنگ کانظام بھی وضع کردیاہے،حکومت،اسکولزانتظامیہ اوروالدین مل کرصورتحال کوبہتربناسکتے ہیں۔

واضح رہے کہ کراچی میں جمعہ کی دوپہر پریس کانفرنس کرتے ہوئے سعید غنی نے کہا تھا کہ پرائمری اورپری پرائمری کے بچے اگلے ہفتے 28 ستمبرسے اسکول جاسکتے ہیں۔ انھوں نے تسلیم کیا کہ کئی جگہوں پراب بھی مسائل کا سامنا ہے، انتہائی سختی سےایس اوپیزپرعملدرآمدکرائیں گے، ایس اوپیزپرعملدرآمدنہ کرانےپرکارروائی ہوسکتی ہے۔

ایس او پیز سےمتعلق سعید غنی نے یہ مزید کہا کہ جن اسکولوں کےکمرے کم ہیں وہ شفٹ کرلیں،اگر ایسا ممکن نہیں تو آدھےبچوں کو ایک روز بلائیں اور دوسرے بچوں کو اگلے روز بلوایا جائے۔ اس کےعلاوہ جہاں کمرے زیادہ ہیں، وہاں کلاسز کی تعداد بھی بڑھائی جاسکتی ہے۔اسکول وینز پربھی لازم ہوگا کہ فاصلوں کویقینی بنائیں۔

سعید غنی کا کہنا تھا کہ ایس اوپیزبنانےمیں بہت ساری چیزیں اسکول پرچھوڑ دی ہیں،امید ہے کہ اسکول انتظامیہ اور والدین تعاون کریں گے۔ سعید غنی نے والدین کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ بچوں کو خود اسکول لے کر جانے اور واپس لانے کی کوشش کریں۔والدین سے متعلق انھوں نے یہ بھی وضاحت کی کہ جووالدین بچوں کواسکول چھوڑنے لے جانے کاکام خود کریں گے وہ محفوظ رہیں گے اور وہ خود بھی ایس اوپیزکا جائزہ لے سکیں گے۔

سعید غنی کا یہ بھی کہنا تھا کہ وزیرصحت کےخدشات غلط نہیں بالکل درست ہیں، ملک میں کروناکی صورتحال میں بہتری آئی ہے، ٹاسک فورس کی میٹنگ میں اسکول کھولنےکافیصلہ ہوا۔

وزیرتعلیم نے واضح کردیا کہ جووالدین بچوں کواسکول نہیں بھیجناچاہتےوہ نہ بھیجیں، تعلیم سےزیادہ بچوں کی صحت کاخیال رکھناہے،اسکول کھولنے اور بچوں کو اسکول بھیجنےپرکوئی زبردستی نہیں ہے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube