Saturday, October 24, 2020  | 6 Rabiulawal, 1442
ہوم   > پاکستان

موٹروے ریپ: پندرہ دن بعد بھی ملزم گرفتار نہ ہوسکا

SAMAA | - Posted: Sep 23, 2020 | Last Updated: 1 month ago
SAMAA |
Posted: Sep 23, 2020 | Last Updated: 1 month ago

پولیس کے تمام حربے ناکام

لاہور سیالکوٹ موٹروے ریپ کیس کا مرکزی ملزم عابد پندرہ روز بعد بھی گرفتار نہ ہو سکا۔ آئی جی پنجاب کی طرف سے بنائی جانے والی ریپڈ رسپانس فورس کو بھی اب تک کامیابی نہیں ملی۔ پولیس کا مخبری نظام بھی مدد گار ثابت نہیں ہورہا۔

ہائی پروفائل کیس کے ملزم عابد کا گرفت میں نہ آنا پولیس کی کارکردگی پر سوالیہ نشان بن گیا۔ چند گھنٹوں میں گرفتاری کے اعلانات ہفتوں میں بھی پورے نہ ہوسکے۔ پولیس کی ٹیمیں بنیں، چھاپے مارے گئے، ملزم کے قریبی رشتہ دار بھی گرفتار ہوئے مگر عابد ہاتھ نہ آسکا۔

مختلف شہروں میں تعینات پولیس ٹیموں کی ناکامی پر آئی جی پنجاب نے ریپڈ رسپانس فورس تشکیل دے دی ہے۔ ہر ضلع میں ایک گاڑی، ایک اے ایس آئی انچارج اور چار اہلکار چوبیس گھنٹے ڈیوٹی دیں گے۔ ٹیمیں ملزم کے حوالے سے معلومات ڈی آئی جی انویسٹی گیشن کو رپورٹ کریں گی۔

اس سے پہلے سادہ کپڑوں میں پولیس اہلکاروں نے مختلف درباروں کی چیکنگ کی۔ خیمہ بستیوں میں بھی ملزم کو تلاش کیا گیا لیکن کوئی سراغ نہ مل سکا۔ ذرائع کے مطابق پولیس نے کچے کے علاقے میں بھی مخبری نیٹ ورک پھیلا دیا ہے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube