Monday, October 19, 2020  | 1 Rabiulawal, 1442
ہوم   > پاکستان

مرتضیٰ وہاب کی پرائمری اسکول کھولنےکی مخالفت

SAMAA | - Posted: Sep 12, 2020 | Last Updated: 1 month ago
SAMAA |
Posted: Sep 12, 2020 | Last Updated: 1 month ago

سندھ حکومت کےترجمان مرتضیٰ وہاب نے بطور والد پرائمری اسکول کھولنے کے فیصلے پر نظر ثانی کا مطالبہ کردیا ہے۔

مرتضیٰ وہاب نےہفتے کواپنے ٹویٹ میں بتایا کہ وہ بطور والد سندھ کے محکمہ تعلیم اوروفاقی حکومت سےدرخواست کرتے ہیں کہ اسکولوں کو کھولنےخصوصا پرائمری اسکول کے حوالے سے فیصلے پر نظرثانی کریں۔

انھوں نےکہا کہ کرونا وائرس کی صورتحال ابھی تک واضح نہیں ہوئی ہے اورطالبعلم ایس او پیز کی صحیح اندازمیں پاسداری نہیں کرسکیں گے۔

واضح رہےکہ 7 ستمبر کو وفاق کی جانب سے صوبے سے مشاورت کے بعد اعلان کیا گیا تھا کہ ملک بھر میں تعلیمی ادارے مرحلہ وار15ستمبر سے کھول دئیے جائیں گے۔ پرائمری اسکولوں کو 30 ستمبر سے کھولنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

اس کےعلاوہ،وزیرتعلیم سندھ نے جمعہ کو پریس کانفرنس میں بتایا کہ اس برس اسکولوں میں سردیوں کی تعطیلات نہیں ہونگی اور تعلیمی سیشن 15 ستمبر سے 15 اپریل 2021 تک ہوگا۔

صوبائی وزیرتعلیم نے بتایا کہ کرونا کی صورتحال بہت بہتر ہے لیکن اس فیصلہ کے بعد اب بھی سوچ بچار جاری ہے کہ کرونا کم ہوا ہے اور ختم نہیں ہوا،اس وقت بہت زیادہ احتیاط کی ضرورت ہے۔

سعیدغنی نے تسلیم کیا کہ 15 ستمبر کوحالات بہت زیادہ تبدیل شدہ ہوں گے کیوں کہ چھوٹے بچوں سے ایس او پیز فالو کروانا زیادہ مشکل ہے، اسکول کھولنا بازار کھولنے سے بھی مشکل کام ہے اور بچوں کو بھیجتے وقت بہت زیادہ تیاری کرنی پڑے گی ۔ انھوں نے بتایا کہ میڈیا کے ذریعے آگاہی مہم چلائیں گے۔

انھوں نے کہا کہ کچھ والدین ابھی بھی بچوں کواسکول بھیجنے کوتیارنہیں ہیں،جوبچے اسکول نہیں آنا چاہتے ان کوآن لائن تعلیم دی جائے گی کیوں کہ ہر اسکول کا ماحول مختلف ہے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube