Saturday, October 16, 2021  | 9 Rabiulawal, 1443

ملک بھر میں تعلیمی ادارے کھولنےکاحتمی فیصلہ ہوگیا

SAMAA | - Posted: Sep 7, 2020 | Last Updated: 1 year ago
SAMAA |
Posted: Sep 7, 2020 | Last Updated: 1 year ago

ملک بھر کے تمام تعلیمی ادارے مرحلہ وار کھولنے کا فیصلہ کرلیا گیا ہے۔

وفاقی وزیرتعلیم شفقت محمود اورمشیرصحت ڈاکٹرفیصل سلطان نے اسلام آباد میں مشترکہ پریس کانفرنس میں بتایا کہ  این سی او سی نے تعلیمی ادارے کھولنےکی حتمی منظوری دے دی ہے۔15 ستمبر سےتمام یونی ورسٹیاں،پروفیشنل کالج کھول دئیےجائیں گے،ہائر ايجوکيشن کے70لاکھ طالبعلم ہيں۔اس کےعلاوہ کالجز،نویں اور دسویں کلاسز کو بھی 15 ستمبر سے کھول دیا جائے گا۔

انھوں نے مزید بتایا کہ اس کےبعدبچوں کی صحت کاجائزہ 7 روزتک لیا جائےگا،جس کا دوبارہ جائزہ لینے کے بعد 23 ستمبر سے چھٹی،ساتویں اورآٹھویں جماعتوں کوبھی کھول دیاجائےگا۔ان جماعتوں میں زیر تعلیم طلبہ کی تعداد 64 لاکھ ہے۔انھوں نے مزید بتایا کہ30 ستمبرکواگرحالات بہتر رہے،تو پرائمری کے لیے بھی اسکول کھول دئیے جائیں گے۔

شفقت محمود نےکہا کہ 15 ستمبر سے ووکیشنل ادارے بھی کھولےجائیں گے،جب تعلیمی اداروں کا ذکر کیا جاتا ہے تو ان میں مدارس سمیت تمام ادارے شامل ہوتے ہیں۔انھوں نے واضح کردیا کہ اگر تعلیمی اداروں نےبنیادی تدابیرپرعمل نہ کیا تواس کی اجازت نہیں ہوگی اور کارروائی کی جائے گی۔

انھوں نے یہ بھی کہا کہ حالات کا جائزہ لےکر فيصلہ کيا اورتمام صوبوں اوراسکولز سے ڈيٹا ليا گيا۔وزیرتعلیم نےکہا کہ یہ آسان فیصلہ نہیں تھا، کامیابی تب ہی ہوگی جب والدین سمیت اساتذہ اور دیگر تعلیمی اداروں کے ایڈمنسٹریٹرز کا تعاون حاصل ہوگا۔انھوں نے یہ بھی کہا کہ کورس ورک سمیت امتحانات کے شیڈول پر بھی مستقبل میں فیصلہ کیا جائےگا۔

شفقت محمود نےکہا کہ 6 ماہ انتہائی مشکل تھے،تعلیمی ادارے کھلنےکےابتدائی 7 روز تک کرونا کی صورتحال کاجائزہ لیاجائےگا۔وفاقی وزیرنےتسلیم کیا کہ 13مارچ کواسکول بندکرنےکامشکل فیصلہ کیاتھا۔

اس موقع پر ڈاکٹر فیصل نے بتایا کہ ملک میں کرونا کی صورتحال اب کنٹرول میں ہے،آنے والے دنوں ميں احتياط کرنی ہےاور بتدریج تعلیمی ادارےکھول دینےچاہیں۔ انھوں نے کہا کہ بچوں کوایک دن بلایاجائےاور ایک دن چھٹی دی جائے،کلاس رومزمیں بچوں کی تعداد کم رکھی جائے۔

مشیر صحت نے کہا کہ تعلیمی اداروں میں بچوں کو بٹھانے میں مناسب فاصلہ اختیار کیاجائے، والدین بچوں سےماسک کا استعمال لازمی کروائیں، بیمار بچوں کو اسکول نہ بھیجا جائے۔ڈاکٹرفیصل نےکہا کہ خاص اداروں ميں ہر 2ہفتوں بعد کرونا ٹيسٹ ہوگا۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube