کراچی: گجر نالے میں ڈوبنے والے تینوں افراد کی لاشیں برآمد

SAMAA | - Posted: Aug 23, 2020 | Last Updated: 10 months ago
Posted: Aug 23, 2020 | Last Updated: 10 months ago

جاں بحق افراد کا تعلق ایک ہی خاندان سے تھا

کراچی کے گجر نالے میں موسلا دھار بارش کے دوران ڈوبنے والے تینوں افراد کی لاشیں برآمد کرلی گئی ہیں۔ تینوں افراد کا تعلق ایک ہی خاندان سے تھا۔

کراچی سے نمائندہ سما کے مطابق نیو کراچی کے مقام پر بہنے والے گجر نالے میں ڈوبنے والے ايک ہی خاندان کے تينوں افراد کی لاشيں اتوار 23 اگست کی صبح نکال لی گئیں۔ اہل خانہ کا کہنا ہے کہ ان کے پیارے ڈوبتے رہے، لیکن کوئی مدد کو نہ آیا۔

جاں بحق بلال کی نماز جنازہ بھی ادا کردی گئی، جب کہ تدفین 6 نمبر قبرستان میں کی گئی۔ اہل خانہ کا کہنا تھا کہ ہم نے اپنی مدد آپ کے تحت تمام لاشیں نکالیں۔ ناصر اور بلال باپ، بیٹا اور گھر کے کفیل تھے۔ ناصر 5 بچوں کا والد اور گھر کا سہرا تھا۔

تینوں افراد جمعہ 21 اگست کی شام گجر نالے میں گر گئے تھے۔ 2 افراد کی لاشيں گزشتہ روز ہفتہ 22 اگست کو ، جب کہ ايک شخص کی لاش آج صبح اتوار کو نکال لی گئی۔ جاں بحق افراد کی شناخت ناصر، بلال اور عدنان کے ناموں سے کی گئی ہے۔

امدادی ٹیموں کے مطابق موسلا دھار بارش کے دوران برساتی ریلے میں بہنے والے آپس میں باپ، بیٹا اور چچا تھے۔ نالے کے قریب ہی ان کی پنکچر کی دکان تھی۔

باپ اپنے بیٹے ناصر اور بھائی کے ہمراہ بارش کے دوران دکان کو محفوظ بنا رہا تھا کہ اچانک سے آنے والا پانی کا ریلا تینوں افراد کوبہا کر لے گیا تھا۔

واضح رہے کہ کراچی میں جمعہ کے روز ہونے والی بارش کے بعد دوسرے روز ہفتہ کو بھی بيشتر مقامات پر نکاسی کا کام مکمل نہيں ہوسکا، جس کے باعث ٹريفک کی روانی متاثر ہے۔

شاد مان ميں پانی اپارٹمنٹس ميں داخل ہونے کے بعد مکين جان بچانے کے ليے چھتوں پر چڑھ گئے۔ جب کہ گجر نالہ بپھرنے پر نالے کا پانی ایف سی ایریا کے سرکاری مکانات میں داخل ہوگیا تو کئی خاندان مسجد میں پناہ لینے پر مجبور ہوگئے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube