Sunday, September 27, 2020  | 8 Safar, 1442
ہوم   > پاکستان

سندھ ایپکس کمیٹی کا اہم اجلاس آج ہوگا

SAMAA | - Posted: Aug 24, 2020 | Last Updated: 1 month ago
SAMAA |
Posted: Aug 24, 2020 | Last Updated: 1 month ago

فائل فوٹو

وزيراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے ايپيکس کميٹی کا اہم اجلاس  آج 24 اگست کو طلب کرليا۔ آخری اجلاس سال 2018 دسمبر میں ہوا تھا۔

وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ کی درخواست پر ایپکس کمیٹی سندھ کا اجلاس پیر 17 اگست کی صبح ہونا تھا، تاہم وزیراعلی سندھ کی مصروفیات اور کراچی میں بارش کے بعد پیدا ہونے والی صورت حال کے بعد اب یہ اجلاس آج 24 اگست کو طلب کیا گیا ہے۔ اجلاس میں کور کمانڈر کراچی لیفٹننٹ جنرل ہمایوں عزیز کو بھی  مدعو کيا گيا ہے۔

اجلاس ميں سیاسی اور عسکری قیادت کراچی سے متعلق اہم مسائل اور حل پر غور کرے گی۔ نيشنل ايکشن پلان اور کراچی سيف سی پراجيکٹ پر عمل درآمد کا جائزہ ليا جائے گا۔ اجلاس ميں شرکا کو موٹر سائيکلوں پر ٹريکر کی تنصيب کے منصوبے پر بھی بريفنگ دی جائے گی۔

آج ہونے والے اجلاس میں گزشتہ اجلاس کے فيصلوں پر عمل درآمد کا بھی جائزہ ليا جائے گا۔ یہاں یہ بات بھی قابل ذکر ہے کہ سندھ ايپيکس کميٹی کا اجلاس تقريباً ايک سال بعد طلب کيا گيا ہے۔ اجلاس میں کراچی کی تعمیر نو سے متعلق گزشتہ فیصلوں پر عمل درآمد کا جائزہ لیا جائے گا۔ شرکا اسٹریٹ کرائمز، مجوزہ قانون سازی اور سیف سٹی پراجیکٹ سمیت دہشت گردی اور سیکیورٹی صورت حال پر بھی بات چیت کریں گے۔

اس سے قبل گزشتہ ماہ ایپکس کمیٹی کو دوبارہ فعال کرنے سے متعلق اطلاعات سامنے آئی تھیں۔ فیصلہ صوبے میں دہشت گردی کے واقعات میں اضافے، دہشت گرد گروپس کو غیر ملکی فنڈنگ اور تخریب کاری کے بڑھتے واقعات پر کیا گیا۔

سندھ میں دہشت گردی کے حالیہ واقعات جن میں پاکستان اسٹاک ایکسچینج پر حملے، صوبے کے دیگر اضلاع میں کریکر حملوں اور تخریک کاری کے واقعات کے حوالے سے قانون نافذ کرنے والے اداروں کی رپورٹس سامنے آئی ہیں کہ پاکستان میں دہشت گردی کرانے کے لیے بڑے پیمانے پر غیرملکی فنڈنگ کی گئی ہے اور دہشت گردوں کے مختلف گروپس کو مشترکا طور پر استعمال کیا جا رہا ہے۔ پاکستان اسٹاک ایکسچینج حملے میں ملوث دہشت گرد وں کا تعلق بھی مختلف گروپس سے تھا۔

بھاری فنڈنگ کے سبب ہی دہشت گردوں نے ماضی کے برعکس دہشت گردی کی کارروائی کے لیے چوری یا چھینی گئی گاڑی استعمال نہیں کی بلکہ گاڑی خریدی گئی۔

کراچی، گھوٹکی اور دیگر شہروں میں کریکر حملوں میں علیحدگی پسند تنظیموں کے مختلف گروپس کو استعمال کیاگیا، جن میں دیہی سندھ اور کراچی کے بعض دہشت گرد گروپس شامل ہیں، دہشت گردوں کے دوبارہ منظم ہونے اور اس طرز کے واقعات کے ساتھ دہشتگردوں کی فنڈنگ کی اطلاعات سامنے آنے کے بعد سندھ حکومت نے صوبائی ایپکس کمیٹی کو دوبارہ فعال کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube