Thursday, October 1, 2020  | 12 Safar, 1442
ہوم   > پاکستان

اسلام آباد: ببر شیر کی جوڑی ہلاک

SAMAA | - Posted: Jul 30, 2020 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: Jul 30, 2020 | Last Updated: 2 months ago

منتقلی کیلئے دھویں سے بیہوش کرنا جان لیوا ثابت ہوا

ماہرین کے مطابق اسلام آباد چڑیا گھر کا ببر شير اور شيرنی متعلقہ عملے کی مبینہ نا اہلی کے باعث ہلاک ہوگئے۔

شیروں کو اسلام آباد چڑیا گھرسے لاہور منتقل کیا جانا تھا تاہم منتقلی کیلئے بیہوش کرنے کے دوران بد انتظامی و بے احتیاطی کے باعث یہ حادثہ رونما ہوا۔

عدالتی حکم پر منتقلی کیلئے جولائی 22 کو ببر شیر کے جوڑے کو سکون آور دوا دے کر بیہوش کرنے کے بجائے پنجرے میں آگ لگا کر دھواں پیدا کیا گیا تھا جو شیروں کا دم گھٹنے کا باعث بنا۔

شیرنی کی موت کل واقع ہوئی تھی جبکہ ببر شیر جس کی حالت خاصی تشویش ناک تھی آج جمعرات کو موت کی آغوش میں چلا گیا۔

دریں اثناء پاکستان وائلڈ لائف فاؤنڈیشن کے وائس چيئرمين صفوان شہاب کا کہنا ہے کہ شیروں کی منتقلی میں عالمی قوانین پر عملدرآمد نہیں کیا گیا اور شیروں کی موت دھوئيں کے باعث دم گھٹنے سے ہوئی۔

ان کا کہنا تھا کہ طاقتور شیر کے اندرونی اعضاء کمزور ہوتے ہیں۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ جانوروں کی منتقلی کے دوران پوری ٹیم کی موجودگی ضروری ہے جس میں ڈاکٹر، شوٹر، دوائی بنانے والا اور 5 دیگر افراد ہونے چاہئیں۔

محکمہ جنگلی حیات کا کہنا ہے کہ اس حوالے سے تفصیلی معلومات شیروں کے پوسٹ مارٹم کے بعد ہی جاری کی جاسکتی ہیں۔

ببر شیر اور شیرنی 4 سال کے تھے اور انہیں کیپیٹل ڈویلپمنٹ اتھارٹی اور پنجاب حکومت کے مابین جانوروں اور پرندوں کے تبادلہ پروگرام کے تحت مئی 2016 میں لاہور سفاری پارک سے اسلام آباد کے مرغزار چڑیا گھر لایا گیا تھا۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube