Sunday, September 27, 2020  | 8 Safar, 1442
ہوم   > پاکستان

چلاس:دہشتگردوں کیخلاف آپریشن میں اہلکاروں سمیت7افرادجاں بحق

SAMAA | - Posted: Jul 28, 2020 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: Jul 28, 2020 | Last Updated: 2 months ago

متاثرہ گھر کا ایک منظر

چلاس میں دہشت گردوں کی موجودگی کی اطلاع پر کارروائی کے دوران 5 سی ٹی ڈی اہل کار شہید ہوگئے۔

گلگت سے نمائندہ سما منظر شگری کے مطابق چلاس کے علاقے رونئی محلہ ميں رات گئے انسداد دہشت گرد یونٹ نے گلگت میں گھر پر چھاپا مارا، اس دوران دہشت گردوں کی جانب سے سی ٹی ڈی اہل کاروں پر جدید ہتھیاروں سے شدید فائرنگ شروع کردی۔

پولیس کے مطابق فائرنگ کے تبادلے میں دہشت گردوں کی فائرنگ سے 5 اہل کار شہید ہوگئے، جب کہ کارروائی کے دوران دیگر 2 افراد بھی مارے گئے۔ آپریشن ملزمان کی موجودگی کی خفیہ اطلاعات پر کیا گیا۔ فائرنگ سے 5 اہل کار زخمی بھی ہوئے، جنہیں آر ایچ کیو اسپتال چلاس منتقل کردیا گیا۔

سی ٹی ڈی حکام کے مطابق دہشت گردوں سے بھاری تعداد میں اسلحہ بھی برآمد کیا گیا ہے۔ سی ٹی ڈی انسپکٹر ایس دیامیر کا کہنا ہے رات گئے کی گئی کارروائی پر تحقیقات جارہی ہیں۔ شہداء میں ایک سی ٹی ڈی کا انسپکٹر بھی شامل ہیں۔ شیر خان نے مزید بتایا کہ شہید کی شناخت ایس آئی پی سہراب کے نام سے کی گئی ہے۔

سی ٹی ڈی کی جانب سے جاری فہرست کے مطابق زخميوں ميں انسپکٹر نبی جان، کانسٹيبل شکر، ہدايت کريم، شان اور محمد علی شامل ہیں۔ مرنے والے ملزمان کی شناخت اظہار اللہ اور بشارت کے ناموں سے کی گئی ہے۔

شہید ہونے والے اہل کاروں میں جنيد علی، شکيل، سہراب، اشتياق احمد، غلام مرتضیٰ شامل ہیں۔

واقعہ پر نگران وزیراعلیٰ میر افضل نے نوٹس لیتے ہوئے فوری رپورٹ طلب کرلی۔ میر افضل خان کا کہنا تھا کہ آئی جی واقعے کی فوری رپورٹ پیش کریں، پولیس پارٹی پر حملہ افسوس ناک ہے۔\

انہوں نے کہا کہ چلاس واقعے میں شہید پولیس افسران اور جوانوں کو سلام عقیدت پیش کرتے ہیں۔ ملزمان کو کیفر کردار تک پہنچائیں گے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube