Sunday, September 20, 2020  | 1 Safar, 1442
ہوم   > پاکستان

یوایس ایڈ کے 71اسکول نجی شعبے کے حوالے

SAMAA | - Posted: Jul 22, 2020 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: Jul 22, 2020 | Last Updated: 2 months ago
USAID

فائل فوٹو

وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ کی موجودگی میں یو ایس ایڈ کے قائم کیے گئے نئے 71 اسکولوں کو نجی شعبے کو دینے کے معاہدے پر دستخط کر دیے گئے۔

یہ معاہدہ حکومت سندھ، سی ایف سی اور ہینڈز کے درمیان 10 سالوں کیلئے طے پایا گیا۔ سی ایف سی اور ہینڈز 71 اسکولوں کو محکمہ تعلیم کی نگرانی میں 10 سالوں تک چلائے گی۔

اس موقع پر وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ کا کہنا تھا کہ پبلک پرائیوٹ پارٹنرشپ میں سندھ حکومت ملک میں سب سے بہتر کام کر رہی ہے اور یہ 71 اسکول یو ایس ایڈ کے سندھ بیسک ایجوکیشن پروگرام کے تحت قائم کیے گئے ہیں۔

سید مراد علی شاہ کا کہنا تھا کہ امریکی حکومت کی طرف سے یہ اسکول حکومت سندھ کو تعلیم کی بہتری کیلئے ایک تحفہ ہے اور ان اسکولز کو قائم کرنے کیلئے امریکا نے 159.2 ملین ڈالرز جبکہ سندھ حکومت نے 10 ملین ڈالرز کا خرچہ کیا ہے۔

وزیر تعلیم سعید غنی کا کہنا تھا کہ ان اسکولوں میں سے 25 نئے اسکول صوبے کے 5 اضلاع میں ہیں، جو کہ دادو، قمبر، شہداد کوٹ، کراچی اور لاڑکانہ میں ہیں۔

یو ایس ایڈ کی مشن ڈائریکٹر جولی کونین نے کہا کہ حکومت سندھ تعلیم پر خاص توجہ دے رہی ہے اور نجی شعبے کے تعاون سے تعلیم کے شعبے میں اہم پیش رفت کی ہے۔

تقریب میں وزیر تعلیم سعید غنی، چیئرمین پی اینڈ ڈی محمد وسیم، سیکریٹری تعلیم احمد بخش ناریجو، سی ای ایف کے ایم ڈی قاضی کبیر اور دیگر نے شرکت کی۔ تقریب میں یو ایس ایڈ کے نمائندوں اور نجی شراکت داروں کے نمائندوں نے شرکت کی۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube