Saturday, October 31, 2020  | 13 Rabiulawal, 1442
ہوم   > پاکستان

اسلام آباد: سینیر صحافی مطیع اللہ جان گھر پہنچ گئے

SAMAA | - Posted: Jul 22, 2020 | Last Updated: 3 months ago
SAMAA |
Posted: Jul 22, 2020 | Last Updated: 3 months ago
فائل فوٹو: سینیر صحافی مطیع اللہ جان

اسلام آباد سے 21 جولائی 2020 کی صبح اغواء کیے گئے سينیر صحافی مطيع اللہ جان 12 گھنٹے بعد گھر واپس پہنچ گئے، انہيں فتح جنگ کے قريب چھوڑا گيا۔

رات گئے میڈیا سے گفتگو میں مطیع اللہ کے وکيل شاہد عباسی کا کہنا تھا کہ مطيع اللہ جان خيريت سے ہيں، ان کی آنکھوں پر پٹياں باندھی گئی تھيں۔ نامعلوم افراد انہیں گاڑی میں کئی علاقوں میں گھماتے رہے۔

مطیع اللہ کے وکیل نے مزید بتایا کہ اغوا کار انہیں جہاں چھوڑ کر گئے وہ کچے کا علاقہ تھا، مطيع اللہ جان پيدل چل کرسڑک تک پہنچے اور وہاں کسی سے فون لے کر انہوں نے خيريت کی اطلاع دی اور مقام کا بتايا۔

واضح رہے کہ مطیع اللہ جان کو منگل 21 جولائی 2020 کی صبح اسلام آباد کے سیکٹر جی 6 سے اغوا کیا گیا تھا۔ اغوا کی خبر پھیلتے ہی شوشل میڈیا پر مطیع اللہ جان کے نام سے ہیش ٹیگ ٹاپ بن گیا۔ مختلف سماجی، سیاسی اور صحافی حلقوں کی جانب سے سینیر صحافی کے اغوا کے خلاف شدید احتجاجا اور غم و غصے کا اظہار کیا گیا۔

صحافی تنطیموں نے بھی سینیر صحافی کے اغوا پر شدید ردعمل کا اظہار کیا اور حکومت سے جلد از جلد ان کی بحفاظت واپسی کا مطالبہ کیا۔

مطیع اللہ کے اغوا کی ویڈیو بھی سوشل میڈیا پر پورا دن وائرل ہوتی رہی۔ جس میں کچھ گاڑیوں میں سوار افراد کی جانب سے انہیں اغوا کرتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے۔ بعد ازاں مطیع اللہ جان کے ٹوئٹر اکاؤںٹ سے ان کے بیٹے نے والد کے اغوا ہونے کی بھی تصدیق کی۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube