Wednesday, September 30, 2020  | 11 Safar, 1442
ہوم   > پاکستان

اسٹریٹ کرائمز، 6ماہ میں 26افراد جاں بحق اور 200سے زائدزخمی

SAMAA | - Posted: Jul 16, 2020 | Last Updated: 3 months ago
Posted: Jul 16, 2020 | Last Updated: 3 months ago

کراچی میں اسٹریٹ کرمنلز نے ہرماہ تقریباً 40افراد کوگولی ماردی

کراچی میں انسانی جان سے زیادہ موبائل فون قیمتی ہوگیا، صرف 6 ماہ میں ڈکیتی میں مزاحمت پر 26 افراد جان سے گئے، گولیاں لگنے سے 200 سے زائد شہری زخمی بھی ہوئے جبکہ سال 2019ء میں وارداتوں کے دوران 44 افراد لقمۂ اجل بنے اور تقریباً 390 زخمی ہوئے تھے۔

کراچی ميں اسٹريٹ کرمنلز کیلئے انسانی جان کی قيمت ایک موبائل سے زیادہ نہیں، رواں سال اسٹريٹ کرمنلز نے 26 افراد کو قتل کردیا۔ جنوری ميں ڈکيتوں نے مزاحمت پر 3 افراد کی جان لی جبکہ 54 کو فائرنگ کرکے زخمی کيا۔

رپورٹ کے مطابق فروری ميں اسٹریٹ کرمنلز کی فائرنگ سے 4 افراد جاں بحق اور 39 زخمی ہوگئے، مارچ میں بھی 4 افراد لقمۂ اجل بنے جبکہ 24 زخمی ہوکر اسپتال پہنچے۔

کراچی پولیس کے مطابق اپريل ميں 3 افراد ڈاکوؤں سے مزاحمت کے دوران قتل اور 26 زخمی ہوئے، مئی ميں 3 افراد جاں بحق 30 زخمی ہوئے جبکہ جون ميں ڈکیتوں نے 7 افراد کو قتل کردیا 37 افراد زخمی بھی ہوئے۔

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ رواں ماہ کے 15 دنوں میں اب تک 2 افراد جاں بحق اور 15 افراد زخمی ہوچکے ہيں۔

گزشتہ سال مجموعی طور پر وارداتوں کے دوران 44 افراد لقمۂ اجل بنے جبکہ 389 زخمی ہوئے تھے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube