Monday, August 10, 2020  | 19 Zilhaj, 1441
ہوم   > پاکستان

سندھ میں 20جولائی سے انسدادپولیو مہم دوبارہ شروع کرنیکا فیصلہ

SAMAA | - Posted: Jul 14, 2020 | Last Updated: 4 weeks ago
SAMAA |
Posted: Jul 14, 2020 | Last Updated: 4 weeks ago

POLIO, PAKISTAN

سندھ میں 20 جولائی سے محدود پیمانے پر انسداد پولیو مہم دوبارہ سے شروع کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے، جس کا آغاز کراچی سے کیا جائے گا۔ کرونا وائرس کی وباء کے نتیجے میں مارچ سے امیونائزیشن مہم بند ہونے کے بعد یہ پہلی انسداد پولیو مہم ہوگی۔

انسداد پولیو مہم کراچی کے ہائی رسک علاقوں بلدیہ، اورنگی ٹاؤن، نارتھ ناظم آباد، لیاقت آباد اور سائٹ ٹاؤن میں شروع کی جائے گی۔

سندھ ایمرجنسی آپریشن سینٹر فار پولیو نے منگل کو بتایا کہ مہم کے دوران 5 سال سے کم عمر کے 2 لاکھ 60 ہزار بچوں کو پولیو سے بچاؤ کے قطرے پلائے جائیں گے۔

کراچی میں مہم کے بعد سندھ بھر میں سال کے آخر تک ماہانہ بنیادوں پر انسداد پولیو مہم چلائی جائے گی۔

ترجمان ای او سی سندھ کا کہنا ہے کہ یہ مہم انتہائی اہمیت کی حامل ہے کیونہ ہمیں بچوں کو پولیو وائرس سے بچانے، ان کے بہتر اور صحت مند مستقبل کیلئے انہیں اورل پولیو ویکسین دینا بہت ضروری ہے۔

پاکتان میں رواں سال اب تک 59 پولیو کیسز رپورٹ ہوچکے ہیں جن میں 20 بچوں کا تعلق سندھ سے ہے۔

ترجمان نے مزید کہا کہ کرونا وائرس کے باعث مارچ میں عالمی سطح پر انسداد پولیو مہم روکنے کے باعث بیماری کو قابو پانے کی کوششوں کو دھچکا پہنچا، اب یہ انتہائی ضروری ہوگیا ہے کہ بچوں کی قوت مدافعت بڑھانے کیلئے انہیں یہ ویکسین فراہم کی جائے۔

وباء کے دوران معمول کی ویکسینیشن بھی متاثر ہوئی، جس کے باعث بچوں کے وائرس سے متاثر ہونے کا خطرہ بھی بڑھ گیا۔

کرونا وائرس کی وباء کے دوران حفاظتی انتظامات سے متعلق ان کا کہنا تھا کہ آنیوالی مہم کیلئے ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن کے تجویز کردہ احتیاطی اقدامات کئے گئے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ والدین کو گھبرانے کی ضرورت نہیں، ہمارے ورکرز کو سینیٹائزرز، ماسک، دستانے فراہم کئے گئے ہیں اور وہ براہ راست بچوں کو ہاتھ نہیں لگائیں گے، نہ ہی دروازہ کھٹکھٹائیں گے اور نہ ہی والدین سے قریب سے بات چیت کریں گے، کم سے کم وقت دروازے پر رکیں گے۔

ای او سی نے والدین سے درخواست کی ہے کہ وہ اپنے پولیو ٹیم کے ساتھ تعاون کریں۔ سندھ حکومت کا کہنا ہے کہ پولیو سے بچاؤ کے قطرے بچوں کو پلانے کے فواد کرونا وائرس کی منتقلی کے خطرے سے کہیں زیادہ ہیں۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube