Thursday, August 6, 2020  | 15 Zilhaj, 1441
ہوم   > پاکستان

ضروری اشیاء کیلئے 21لاکھ پاکستانیوں نے گھریلو سامان بیچا، سروے

SAMAA | - Posted: Jul 11, 2020 | Last Updated: 4 weeks ago
SAMAA |
Posted: Jul 11, 2020 | Last Updated: 4 weeks ago

کرونا وائرس سے متاثرہ معاشی صورتحال میں دلخراش حقائق

گیلپ سروے میں انکشاف ہوا ہے کہ کرونا وائرس کی وباء کے دوران لاک ڈاؤن کے باعث خراب معاشی صورتحال کے دوران گزشتہ ايک ہفتے ميں پاکستان کے 21 لاکھ خاندانوں کو گھر کا سامان بيچ کر ضرورتيں پوری کرنی پڑيں۔

گیلپ نے پاکستان میں کرونا وائرس کے باعث لاک ڈاؤن کی صورتحال کے معیشت اور عام آدمی پر پڑنے والے اثرات سے متعلق سروے کیا، جس کے مطابق ملک کے 21 لاکھ (تقریباً 10 فیصد) لوگوں نے اپنی ضروریات زندگی کیلئے گھر کا سامان بیچ دیا۔

رپورٹ میں بتاتا گیا ہے کہ 16 فيصد پاکستانيوں نے اس دوران ديگر ذرائع آمدنی تلاش کئے تاکہ خاندانوں کی بنيادی ضروريات پوری کرسکیں۔

گیلپ سروے کہتا ہے کہ 78 فيصد پاکستانيوں نے پورے ملک ميں کارباور کھولنے کی حمايت کی ہے، ۔ لاک ڈاؤن ميں نرمی کا تقاضا کيا ہے جبکہ 14 فيصد کی رائے مختلف ہے۔

سروے کے مطابق 32 فيصد پاکستانيوں کو کووڈ 19 کيسز کے سرکاری اعداد و شمار پر بھروسہ نہيں ہے اور 73 فيصد پاکستانی سمجھتے ہيں کہ اُن کی صحت اُن کی اپنی ذمہ داری ہے، 24 فيصد کا خيال ہے کہ يہ حکومت کی ذمہ داری ہے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube