Thursday, October 22, 2020  | 4 Rabiulawal, 1442
ہوم   > پاکستان

سوات: سیاحتی مقامات کی بندش کیخلاف ہوٹل مالکان کا احتجاج

SAMAA | - Posted: Jul 7, 2020 | Last Updated: 4 months ago
SAMAA |
Posted: Jul 7, 2020 | Last Updated: 4 months ago

ساڑھے 3 ارب روپے کا تقصان اٹھا چکے ہیں،ایسوسی ایشن

سوات میں سیاحتی مقامات کی بندش کے خلاف ہوٹل کے مالکان اور ملازمین نے احتجاج کرتے ہوئے حکومت سے ہوٹل انڈسٹری پر کرونا وائرس کی وبا کے پیش نظر عائد پابندی فوری طور پر ختم کرنے کا مطابلہ کیا ہے۔ 

سوات میں لاک ڈاؤن کے باعث ہوٹل انڈسٹری اور سیاحتی مقامات کی بندش سے مسلسل نقصانات کے بعد ہوٹل مالکان اور ملازمین منگل کو سڑکوں پر نکل آئے اور احتجاجی مظاہرہ کیا۔

سوات پریس کلب میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے ہوٹلز ایسوسی ایشن کے عہدیداروں کا کہنا تھا کہ ہوٹل مالکان کا 3 ماہ میں ساڑھے 3 ارب روپے کا نقصان ہوا ہے۔

ہوٹلز ایسوسی ایشن نے انتظامیہ پر وی آئی پیز کیلئے سیاحی مقامات اور زبردستی ہوٹلز کھلوانے کا الزام بھی عائد کیا۔

ہوٹل مالکان کا کہنا تھا کہ سوات سے تعلق رکھنے والے وزیراعلیٰ محمود خان ہمیں احتجاج پر مجبور کررہے ہیں۔

پاکستان میں ملک بھر کے سیاحتی مقامات اور ہوٹلز بند ہیں تاہم وفاقی حکومت کے مطابق مرحلہ وار مختلف شعبے کھول کر معاشی سرگرمیاں بحال کرنے کی کوشش کی جارہی ہے۔

پاکستان میں کرونا وائرس سے متاثرہ مریضوں کی تعداد میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے، ملک بھر میں اب تک 2 لاکھ 30 ہزار سے زائد مصدقہ کیسز رپورٹ ہوچکے ہیں جن میں سے تقریباً 5 ہزار افراد زندگی کی بازی ہار چکے جبکہ ایک لاکھ 11 ہزار مریضوں اس وبا سے صحت یاب ہوچکے ہیں۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube