Monday, August 3, 2020  | 12 Zilhaj, 1441
ہوم   > پاکستان

پارک لین ریفرنس:آصف زرداری سمیت دیگر پرفردِجرم کی کارروائی موخر

SAMAA | - Posted: Jul 6, 2020 | Last Updated: 4 weeks ago
SAMAA |
Posted: Jul 6, 2020 | Last Updated: 4 weeks ago

پارک لین ریفرنس کیس میں اسلام آباد کی احتساب عدالت نے سابق صدر آصف علی زرداری پر فرد جرم کی کارروائی موخر کردی ہے۔ پارک لین ریفرنس پرسماعت 14جولائی تک ملتوی کردی گئی ۔

پیر کو جب کیس کی سماعت شروع ہوئی تو آصف زرداری کے وکیل فاروق ایچ نائیک نے کہا کہ اس مرحلےپرفردجرم عائد نہیں کی جاسکتی، قرض کےمعاملےپراسٹیٹ بینک نےپہلےبتاناہوتا ہے ڈیفالٹ کون ہے، مکمل تفصیلات فراہم کرناہوتی ہیں جوہمیں نہیں دی گئیں۔

اس پر جج اعظم خان نے کہا کہ فرد جرم عائد کرنے کے لیے عدالت نے سارے انتظامات مکمل کرلیے توآپ آج درخواست دے رہےہیں، آپ کواچھی طرح معلوم تھا کہ آج فردجرم کےانتظامات مکمل ہیں۔

وکیل فاروق ایچ نائیک نے عدالت سے استدعا کی کہ آپ میری درخواست پرنیب کونوٹس جاری کریں، دلائل سےعدالت کومطمئن کروں گاکہ کیسےفردِجرم نہیں ہوسکتی، نیب آرڈیننس کی سیکشن 5آرکےمطابق کارروائی مکمل نہیں کی۔

اس موقع پر نیب نے وکیل فاروق نائیک کی فردجرم مؤخرکرنےکی درخواست کی مخالفت کی۔ نیب پراسیکیوٹر نے کہا کہ ہماراکیس ڈیفالٹ کانہیں،اختیارات کےغلط استعمال کا ہے، 30منٹ میں ابھی فاروق نائیک کی درخواست پرجواب دےسکتےہیں۔ ہم 30 منٹ بعد اس درخواست پر آج ہی بحث کریں گے۔

نیب کی جانب سے عدالت سے استدعا کی گئی کہ ہم آج ہی جواب دیں گے،فرد جرم آج ہی عائدکی جائے۔ اس موقع پر فاروق نائیک نے کسی اور تاریخ پر بحث کے لیےالتوا کی درخواست دائر کردی۔

احتساب عدالت نے پارک لین ریفرنس میں آصف زرداری اور دیگر ملزمان پرفردجرم کی کارروائی مؤخر کردی۔ عدالت نے ریمارکس دئیے کہ آج فرد جرم عائد نہیں کی جاسکےگی، پارک لین ریفرنس پرسماعت 14جولائی تک ملتوی کردی گئی۔احتساب عدالت نے فردِجرم کےخلاف آصف ذرداری کی درخواست پر نیب کو نوٹس جاری کردیا ہے۔آصف زرداری کی درخواست دیگرشریک ملزمان کوبھی فراہم کرنےکاحکم دیا گیا ہے۔ عدالت نے ریمارکس دئیے کہ آصف زرداری کی درخواست پر فیصلے کےبعدفردجرم عائدکی جائےگی۔

واضح رہے کہ احتساب عدالت کے مطابق جعلی اکاؤنٹس کیس کے پارک لین ریفرنس میں سابق صدر سمیت دیگر ملزمان پر آج 6 جولائی کو فرد جرم عائد کی جانی تھی۔عدالت نے حکم دیا تھا کہ ملزمان گھر پر ہوں یا اسپتال میں، اس سلسلے میں کسی کو فرد جرم سے استثنیٰ نہیں ہوگا۔ آصف زرداری اور انور مجيد کو کراچی میں ویڈیو لنک کے ذریعے فرد جرم سنا تھا جب کہ فاروق عبداللہ، شیر علی اور سلیم فیصل احتساب عدالت کراچی سے ویڈیو لنک پر موجود تھے۔

اس حوالے سے ملزمان پر فرد جرم عائد کرنے کے سلسلے میں ڈی جی نیب سندھ نے تین پراسیکیویشن ٹیمیں بھی تشکیل دے دی تھیں۔نیب کورٹ کے مطابق این آئی سی وی ڈی میں انور مجید پر فرد جرم عائد کی جانی تھی۔منتظم جج نے تینوں جگہ ویڈیو لنک کیلئے عدالتی اہلکار تعینات کردیے تھے۔

بیماری کے باعث زرداری اسلام آباد نہیں جا سکتے اس لئے بلاول ہاؤس کراچی میں ویڈیو لنک کا انتظام کر لیا گیا تھا۔

پارک لین کیس میں کب کیا ہوا؟

جعلی اکاؤنٹس اسکینڈل کی تحقیقات کرنے والے نیب راولپنڈی نے قریب ایک سال پہلے19 جولائی 2019 کو آصف زردای ، انور مجید اور 17 دیگر ملزمان کیخلاف پارک لین ریفرنس دائر کیا ۔ یہ قرض کی رقم میں مبینہ فراڈ سے نیشنل بینک کو پونے 4 ارب روپے نقصان پہنچانے کا ریفرنس ہے ۔ آصف علی زرداری کو جن 2 مقدمات میں گرفتار کیا گیا ان میں ایک پارک لین کیس بھی تھا ۔
نیب کے مطابق آصف علی زرداری پارک لین کمپنی میں 25 فیصد کے شئیر ہولڈر ہیں جبکہ اتنے ہی شئیرز انہوں نے اپنے خاندان کے نام پر رکھے ہیں ۔ پارک لین کمپنی نے اپنی ایک بے نامی کمپنی پارتھینون کے نام سے بنائی ۔ اسی پارتھینون کے نام پر نیشنل بنک سے ڈیڑھ ارب روپے کا قرض لیا ۔ یہ رقم واپس نہ کی گئی اور بڑھتے بڑھتے 3 ارب 77 کروڑ روپے تک پہنچ گئی۔ بالآخر پارتھینون کو ڈیفالٹ کر کے اس کے نام پر موجود جائیداد کو ضبط کر لیا گیا ۔ اس ضبط کی گئی جائیداد میں آئی بی سی سنٹر کراچی کے 8 فلور بھی ہیں۔
آصف علی زرداری اور پارک لین کمپنی ، پارتھینوں سے لاتعلقی کا اظہار کرتے ہیں لیکن نیب کے مطابق شواہد بتاتے ہیں کہ پارتھینون کے ڈائریکٹرز اور ملازمین سب وہی ہیں جو پارک لین کمپنی کے ہیں لہذا یہ آصف زرداری کی بے نامی جائیداد ہی ہے۔ زرداری نے ہی 2009 اور 2012 میں بطور صدر پاکستان نیشنل بنک پر اثر انداز ہو کر بے نامی کمپنی کو یہ قرض دلایا ۔ اس کیس میں اومنی گروپ کے سر براہ انور مجید بھی نامزد ہیں ان پر بھی آج ہی فردِ جرم عائد کی جانی تھی،یونس قدوائی اس کیس میں اشتہاری ہیں ۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube