Friday, August 14, 2020  | 23 Zilhaj, 1441
ہوم   > پاکستان

این سی اوسی نے قوم کاسر فخرسے بلند کردیا، وزیراعظم

SAMAA | - Posted: Jul 4, 2020 | Last Updated: 1 month ago
SAMAA |
Posted: Jul 4, 2020 | Last Updated: 1 month ago

 

وزیراعظم عمران خان نے کرونا وائرس سے نمٹنے کیلئے ملک بھر میں مربوط اقدامات یقینی بنانے سے متعلق نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر کی کوششوں کو سراہا۔ ان کا کہنا تھا کہ این سی او سی نے پوری قوم کا سر فخر سے بلند کردیا۔

وزیراعظم عمران خان نے ہفتہ کے روز اسلام آباد میں این سی او سی کے قیام کے 100 دن مکمل ہونے کے موقع پر سینٹر کے دورے کے دوران ایک بریفنگ میں اظہار خیال کرتے ہوئے ایس او پیز پر عملدرآمد کرنے اور کرونا وائرس کے مسئلے سے بحیثیت ایک قوم کے نمٹنے کیلئے قوم کی جرأت اور حوصلے کی بھی تعریف کی۔

وفاقی وزرا، بری فوج کے سربراہ جنرل قمر جاوید باجوہ اور اعلیٰ عہدیدار بھی اس موقع پر موجود تھے جبکہ صوبوں کے نمائندوں نے ویڈیو لنک کے ذریعے بریفنگ میں شرکت کی۔

وزیراعظم نے کرونا وائرس کے دوران متعلقہ حکام کو قواعد و ضوابط پر سختی سے عملدرآمد یقینی بنانے کی ہدایت کی تاکہ عیدالاضحی کے موقع پر وائرس کے پھیلاؤ اور اس کے دوبارہ زور پکڑنے کو روکا جاسکے۔
عمران خان نے اسمارٹ لاک ڈاؤن کی حکمت عملی پر عملدرآمد کروانے اور عوام میں آگاہی مہم جاری رکھنے کیلئے تمام ضروری انتظامی اقدامات کرنے کی بھی ہدایت کی۔
وزیراعظم عمران خان نے تمام صوبوں، آزاد جموں و کشمیر اور گلگت بلتستان کے صحت عامہ کے کارکنوں، ہنگامی خدمات فراہم کرنیوالوں اور انتظامیہ کی ٹیموں کے کردار اور خدمات کا بھی اعتراف کرتے ہوئے ڈاکٹروں، نیم طبی عملے اور ہنگامی خدمات انجام دینے والوں کو خراج تحسین پیش کیا۔

وزیراعظم کو کرونا وائرس کی موجودہ صورتحال اور اس کے پھیلاؤ کے رجحان کے تجزیے پر مبنی تفصیلی بریفنگ دی گئی۔ جس میں بتایا گیا کہ آئی ایم ایف کی عالمی اقتصادی آؤٹ لک کے مطابق پاکستان نے 30 ملکوں کے گروپ میں ترقیاتی عمل میں گراوٹ کے امکان کو منفی 0.4 سے 1.1 فیصد کردیا ہے۔

وزیراعظم نے اسلام آباد میں پنجاب اور خیبرپختونخوا کے مختلف شہروں اور وفاقی دارالحکومت کے ماسٹر پلانز کا جائزہ لینے سے متعلق ایک اعلیٰ سطح کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے صوبائی حکام کو ہدایت کی کہ وہ ماسٹر پلانز پر نظرثانی کیلئے جدید ٹیکنالوجی کو استعمال میں لائیں اور ماسٹر پلانز کو حتمی شکل دینے کا لائحہ عمل اور عبوری حکمت عملی ایک ہفتے کے اندر پیش کریں۔

انہوں نے کہا کہ منصوبہ بندی کے بغیربڑے شہروں کے پھیلاؤ نے پیچیدہ شہری مسائل کو جنم دیا، جو ماحول اور زرعی اراضی کیلئے خطرات کا باعث بن رہی ہے، یہ صورتحال مستقبل میں غذائی تحفظ کیلئے بھی سنگین خطرہ بنے گی۔

وزیراعظم عمران خان نے ہدایت کی ہے کہ ہر شہر میں ترقی اور سماجی و اقتصادی سرگرمیوں کو مدنظر رکھتے ہوئے ان کے ماسٹر پلانز میں ترامیم اور بہتری لانے کے عمل کو آگے بڑھایا جائے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube