Wednesday, October 21, 2020  | 3 Rabiulawal, 1442
ہوم   > پاکستان

کوئٹہ: آن لائن کلاس کیخلاف احتجاج، درجنوں گرفتار طلبہ رہا

SAMAA | - Posted: Jun 25, 2020 | Last Updated: 4 months ago
SAMAA |
Posted: Jun 25, 2020 | Last Updated: 4 months ago

فوٹو: ٹویٹر

بلوچستان میں آن لائن کلاسز طلباء کیلئے درد سر اور والدین کیلئے مشکلات کا سبب بن گئیں۔ کہتے ہیں انٹرنیٹ کی سہولت کے بغیر آن لائن کلاسز کیسے ممکن ہیں؟۔ وزیراعلیٰ بلوچستان کے حکم پر گزشتہ روز آن لائن کلاسز کیخلاف احتجاج کرنیوالے درجنوں گرفتار طلبہ کو رہا کردیا گیا، ایس پی سٹی بھی عہدے سے فارغ کردیئے گئے۔

بلوچستان میں بجلی کی بدترین لوڈ شیڈنگ اور انٹرنیٹ کی سہولت نہ ہونے کی وجہ سے آن لائن کلاسز طلباء کیلئے چیلنج بن گئیں۔ کہتے ہیں کہ بلوچستان کے 70 فیصد علاقوں میں انٹرنیٹ کی سہولت موجود ہی نہیں، باقی علاقوں میں انٹرنیٹ تو درکنار موبائل فون سگنلز بھی ٹھیک سے نہیں آتے۔

مزید جانیے : کوئٹہ میں طلبہ کا آن لائن کلاسز کیخلاف احتجاج، کئی گرفتار

طلبہ کا کہنا ہے کہ طویل لوڈ شیڈنگ کی وجہ سے گھر میں بجلی اور پانی تک نہیں، آن لائن کلاسز کیسے لیں،

آن لائن کلاسز نے والدین کو بھی پریشان کردیا ہے، ان کا کہنا ہے کہ آن لائن کلاسز کیلئے کمپیوٹر سمیت دیگر آلات کی خریداری کا اضافی بوجھ بڑھ گیا ہے۔ دوسری طرف نجی تعلیمی اداروں کی جانب سے 3 ماہ کی فیس جمع کروانے کیلئے بار بار پیغامات بھیجے جارہے ہیں۔

دوسری طرف وزیراعلیٰ جام کمال نے گرفتار طلبہ کو فوری رہا کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے ناروا سلوک اپنانے پر ایس پی سٹی کو عہدے سے ہٹادیا اور بدسلوکی کرنیوالی خاتون کانسٹیبل کیخلاف کارروائی کی ہدایت کردی۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube