Saturday, August 8, 2020  | 17 Zilhaj, 1441
ہوم   > پاکستان

یکساں نصاب تعلیم مارچ 2021ء میں نافذ ہوگا، وزیراعظم

SAMAA | - Posted: Jun 25, 2020 | Last Updated: 1 month ago
SAMAA |
Posted: Jun 25, 2020 | Last Updated: 1 month ago

وزیراعظم نے صوبوں سے فاٹا کی تعمیر و ترقی میں کردار ادا کرنے کی اپیل کرتے ہوئے این ایف سی سے فنڈز کی فراہمی کے عزم کی یاد دہانی کرائی ہے، عمران خان کا کہنا ہے کہ ملک بھر میں یکساں نظام تعلیم مارچ 2021ء سے نافذ ہوگا، مدارس میں بھی دنیاوی تعلیم دی جائے گی، حکومت ملکی ترقی کیلئے ہر ممکن اقدامات کررہی ہے، کرونا کی وباء سے دنیا بھر کی معیشت کو 12 کھرب ڈالر کا نقصان ہوا، ہمیں ایک طرف عوام کو کرونا اور دوسری طرف بھوک سے بچانا ہے، کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ 20 سے 3 ارب ڈالر پر لے آئے، سرمایہ کاری اور زرمبادلہ ذخائر میں اضافہ ہوگیا۔ عمران خان نے اپنے اور سابق حکمرانوں کے دورۂ امریکا کے اخراجات کی تفصیلات ایوان میں پیش کردیں۔

وزیراعظم عمران خان نے قومی اسمبلی اجلاس میں خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ کرونا پر بیرونی دنیا کو دیکھ کر لاک ڈاؤن کیا، صوبوں نے باہر سے دیکھ کر قدم اٹھانے شروع کردیئے، پہلے دن سے خدشہ تھا کہ مغرب، چین یا امریکا کی نقل کریں گے تو صورتحال ان سے بہت مختلف ہوگی، پاکستان میں کچی آبادیاں اور غریب بستیاں ہیں، ہم نے ایک طرف کرونا اور دوسری طرف بھوک سے بچانا ہے۔

ان کا کہنا ہے کہ کسی ملک کو کوویڈ 19 کا اندازہ نہیں تھا، اگر کسی ملک کی حکومت میں کنفیوژن نہیں تھی تو وہ ہماری تھی، تیرہ مارچ کو لاک ڈاؤن کیا آج تک کوئی ایک بات بتا دیں جس میں تضاد ہو، میری کوئی تقریر اٹھا کر دیکھ لیں، کوئی تضاد نہیں آیا، این سی او سے میں روز اعداد و شمار پر غور کیا جاتا ہے، صوبوں اور دیگر فریقین سے مؤثر رابطہ کاری کی، پہلے کسی اسپتالوں اور عملہ کا ڈیٹا موجود نہیں تھا، این سی او سی کی وجہ سے فیصلے بہتر رہے۔

وزیراعظم نے کہا کہ ہمیں کرونا کے پیچھے چھپنے کا طعنہ دیا جاتا ہے، بھارتی وزیراعظم مودی نے لاک ڈاؤن ہمارے بعد کیا، ہندوستان میں مکمل لاک ڈاؤن سے غریب کچلا گیا، غریب کا کچھ سوچا نہیں گیا، لوگ سڑکوں پر مرگئے، اگر ہم نے احتیاط نہ کی تو ہمارے اسپتالوں پر دباؤ مزید بڑھ جائے گا، ٹائیگر فورس کو ایس او پیز پر عملدرآمد پر لگادیا ہے، کرونا کے پیچھے چھپنے کا طعنہ دیا جاتا ہے۔

عمران خان کا کہنا ہے کہ دنیا کو 12 کھرب ڈالر کا نقصان ہوا ہے، برطانیہ کی گروتھ منفی میں چلی گئی، ساری دنیا کی معیشت نقصان میں چلی گئی کوئی نہیں بتاسکتا معاشی حالات کب تک ٹھیک ہوں گے۔

انہوں نے سابقہ حکومتوں پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ ہمیں کوئی سوئٹزر لینڈ کی اکانومی نہیں ملی تھی، جب آئے تو بیس ارب ڈالر کا کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ تھا، جسے 3 ارب ڈالر تک لے آئے ہیں، 16 ہزار ارب کا قرضہ تھا، ہماری باری پر یہ 30 ارب ڈالر تک پہنچ گیا، آدھی رقم قرضے واپس کرنے پر چلی گئی، ابتداء میں ہمارے پاس اخراجات پورے کرنے کیلئے پیسے نہیں تھے۔

عمران خان کا کہنا ہے کہ مجھے پاکستانیوں سے پیسے اکھٹے کرتے کبھی شرم نہیں آتی، جب دوسرے لوگوں سے پیسے مانگے تو بہت شرم آئی، جب آپ ہاتھ پھیلاتے ہیں تو یہ ملک کیلئے شرم کی بات ہے، ڈیفالٹ سے بچنے کیلئے کبھی ایک ملک کبھی دوسرے ملک سے پیسے مانگ رہے تھے،

وزیر اعظم نے سابق حکمرانوں اور اپنے دورۂ امریکا کے اخراجات کی تفصیلات بھی ایوان میں پیش کر دیں۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم ہاؤس کا اسٹاف مزید کم کر سکتا ہوں لیکن انہیں بیروزگار نہیں کرنا چاہتا، حکومت اور فوج نے اپنے اخراجات میں کمی کی ہے۔

عمران خان کا کہنا ہے کہ گیس آدھی قیمت سے بھی کم پر مل رہی ہے لیکن سابقہ حکومتوں نے 15 سال کا مہنگا معاہدہ کرلیا گیا ہمیں بوجھ کے ساتھ پاکستان ملا، 3 سال میں 17 فیصد ٹیکس جمع کرنے کی گروتھ تھی، زرمبادلہ میں 3 فیصد اضافہ ہوا، غیر ملکی سرمایہ کاری دوگنی ہوگئی، ہماری ریٹنگ بی تھری مثبت میں چلی گئی، 5 ہزار ارب کے قرضے واپس کرچکے ہیں، اس ملک کا بہت بڑا ٹیلنٹ باہر بیٹھا ہوا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ کرونا سے سروس انڈسٹری پر سب سے زیادہ اثر پڑا، سیاحت کو بہت نقصان ہوا، کوشش ہے ایس او پیز کے ساتھ سیاحت کھولیں، تعمیراتی سیکٹر کو پہلے کبھی اتنی مراعات نہیں ملیں جو اب دی گئیں، 50 ارب زراعت کیلئے رکھا، فیصلہ کیا ہے کہ اب ساری توجہ زراعت اور تعمیرات پر مرکوز رہے گی۔

وزیراعظم نے خارجہ پالیسی کو حکومت کی بڑی کامیابی قرار دیتے ہوئے کہا کہ امریکا نے پاکستان میں اسامہ کو شہید کردیا، ہمیں نہیں بتایا گیا، اس سے زیادہ ہماری ذلت کیا ہوگی، ڈرون حملے ہوتے رہے اور حکومتیں صرف مذمتیں کرتی رہیں، امریکا سے تعلقات میں آج کوئی دوغلا پن نہیں، امریکا میں اب ہمیں کوئی ذلیل نہیں کرتا، ڈونلڈ ٹرمپ عزت کرتا ہے، ڈونلڈ ٹرمپ افغانستان میں مدد کیلئے ہمیشہ درخواست کرتا ہے، ہم جنگ میں شرکت نہیں کریں گے، صرف امن میں کرینگے، دس سالوں میں دہشت گردی کیخلاف جنگ میں جھوٹ بولا گیا۔

ان کا کہنا ہے کہ مارچ 2021ء میں یکساں تعلیمی نصاب نافذ کررہے ہیں، دینی مدرسوں میں 25 لاکھ بچے پڑھتے ہیں، مدارس میں دنیاوی تعلیم بھی دی جائے گی، عوام کو غربت سے نکالنے کیلئے احساس پروگرام شروع کیا، احساس پروگرام کا فنڈ 208 ارب روپے تک بڑھا دیا، ایک کروڑ خاندانوں کو انصاف کارڈ پہنچارہے ہیں، پناہ گاہوں کو پورے ملک میں پھیلانے کا فیصلہ کیا ہے۔

وزیراعظم نے مزید کہا کہ پہلے بھی کہا تھا کہ بھارتی حکومت کے اقدامات کے بہت سنجیدہ نوعیت کے نتائج نکلیں گے، ہمارا مقابلہ ہندو سپریمسسٹ، فاشسٹ اور نازی انسپائرڈ آئیڈیالوجی سے ہے، بھارت پاکستان کو سبق سکھانے کی باتیں کرتا ہے، پاکستان کو غیر مستحکم کرنے کی بھارت پوری کوشش کررہا ہے، بھارت پاکستان کو بھی بھارتی مسلمانوں کی طرح دبانے کی سوچ رکھتا ہے۔

ان کا کہنا ہے کہ چاہتے ہیں کشمیر کا مسئلہ بات چیت سے حل ہو، بھارت اپنے نقشوں میں آزاد کشمیر کو بھی بھارت کا حصہ دکھاتا ہے، ان کی سوچ کچھ اور ہے، سلامتی کونسل کے اجلاس میں عالمی رہنماؤں کو سمجھایا کہ بھارت میں مودی کی صورت میں بڑا عذاب آگیا، مودی حکومت صرف مسلمانوں کیخلاف نہیں بلکہ ہندوؤں کیلئے بھی مصیبت ہے، مودی نے گجرات میں بطور وزیراعلیٰ مسلمانوں کے قتل عام کی اجازت دی، خواتین کی عزتیں لوٹی گئیں، ایک لاکھ لوگ پناہ گزین بن گئے، تب ہی سمجھ آجانی چاہئے تھی کہ مودی نارمل آدمی نہیں ہے، 5 اگست سے آج تک عالمی اور یورپی میڈیا میں جس طرح کشمیر کے مسئلے کو اجاگر کیا گیا اس طرح پہلے کبھی نہیں ہوا۔

عمران خان نے کہا کہ 31 جنوری سے ٹڈی دل کے حملے کے باعث ایمرجنسی لگا رکھی ہے، این ڈی ایم اے کو ٹڈی دل کے خاتمے کیلئے خرچ کا مکمل اختیار ہے، ٹڈی دل پاکستان کیلئے خطرناک ہوسکتا ہے، ٹڈی دل سے متعلق چیزیں ہمارے اخیتار میں نہیں، پچیس سال میں ایسا حملہ ہوتا ہے، قوم مل کر ٹڈی دل کا مقابلہ کرے۔

وزیراعظم نے صوبوں سے فاٹا کی ترقی میں کردار ادا کرنے کی اپیل کرتے ہوئے کہا کہ حکومت کے پاس کم رقم ہونے کے باوجود فاٹا اور بلوچستان کو بجٹ میں مختص پوری رقم ادا کی جارہی ہے۔ انہوں نے صوبوں کو ایف ایف سی ایوارڈ سے کے پی میں ضم قبائلی علاقوں کی ترقی کیلئے فنڈز فراہم کرنے کے عزم کی یاد دہانی بھی کرائی۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube