Saturday, August 8, 2020  | 17 Zilhaj, 1441
ہوم   > پاکستان

اسرائیل کوتسلیم کرنے کی خبروں میں حقیقت نہیں، شاہ محمودقریشی

SAMAA | - Posted: Jun 16, 2020 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: Jun 16, 2020 | Last Updated: 2 months ago

وزير خارجہ شاہ محمود قريشی کہتے ہيں بھارت کی سلامتی کونسل کی مستقل رکنيت کا معاملہ زير بحث نہيں، اسرائیل کو تسلیم کرنے کے حوالے سے خبروں کی کوئی حقیقت نہیں، فلسطين پر مؤقف واضح ہے دو رياستی نظريے کے کل بھی حمايتی تھے آج بھی ہيں۔

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے قومی اسمبلی میں خطاب کرتے ہوئے بتایا کہ مسئلہ کشمیر سمیت قومی مفادات کے اہم مسائل پر مشترکہ لائحہ عمل تشکیل دینے کیلئے ایک سیاسی کمیٹی قائم کی جارہی ہے، بھارت کی سلامتی کونسل کی مستقل رکنیت کا معاملہ زیر بحث نہیں۔

مسلم لیگ نون کے رہنماء خواجہ آصف کے نکات کا جواب دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ن لیگ، پیپلز پارٹی، جمعیت علمائے اسلام (ف) اور عوامی نیشنل پارٹی کو اس عمل کا حصہ بننے کیلئے مدعو کیا جارہا ہے، مسئلہ کشمیر پر پاکستان کا متفقہ مؤقف ہے۔

شاہ محمود قریشی کا کہنا ہے کہ ہم نے مقبوضہ کشمیر میں بھارت کے 5 اگست 2019ء کے غیر قانونی اقدامات کو مسترد کردیا ہے کیونکہ یہ اقوام متحدہ کے چارٹر اور عالمی قوانین کے منافی ہیں۔

انہوں نے واضح کیا کہ پاکستان اس گروپ کا حصہ ہے جو اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں بھارت کی مستقل رکنیت کی مخالفت کرتا ہے، سلامتی کونسل میں غیر مستقل نشست باری کی بنیاد پر دی جاتی ہے اور ماضی میں پاکستان بھی عالمی ادارے کا غیر مستقل رکن رہ چکا ہے۔

اسرائیل کو تسلیم کرنے سے متعلق وزیر خارجہ اور وزیراعظم سے منسوب بیان کی شاہ محمود قریشی نے سختی سے تردید کردی۔ انہوں نے کہا کہ ان باتوں میں کوئی صداقت نہیں۔

وزیر خارجہ کا کہنا ہے کہ عرب ممالک کے دباؤ میں آکر پالیسی پر نظرثانی نہیں کررہے، پاکستان کا فلسطین سے متعلق تاریخی مؤقف ہے اور ہم دو ریاستی حل کی حمایت کرتے ہیں، جس میں القدس شریف فلسطینی ریاست کا دارلحکومت ہوگا۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube