ہوم   > پاکستان

پی آئی اےمسافرطیارہ حادثہ،مسافروں کی شناخت کاعمل جاری

SAMAA | - Posted: May 23, 2020 | Last Updated: 6 days ago
SAMAA |
Posted: May 23, 2020 | Last Updated: 6 days ago

پی آئی اے کا لاہور سے کراچی آنے والے مسافر طیارہ جمعرات کی دوپہر لینڈنگ سے چند منٹ قبل ماڈل کالونی کے علاقے میں گر کر تباہ ہوگیا۔ مسافر طیارے میں عملے سمیت 99 افراد سوار تھے۔ طیارے میں موجود 2 مسافر حادثے میں زندہ بچ گئے ہیں اور اسپتال میں زیرِ علاج ہیں۔

کراچی میں طیارہ حادثے میں جاں بحق ہونے والے افراد کی میتوں کو سول اور جناح اسپتال منتقل کردیا گیا ہے۔ محکمہ سندھ صحت اور ڈی جی آئی ایس پی آر نے تصدیق کی ہے کہ جائے حادثہ سے تمام لاشوں میں اسپتال منتقل کردیا گیا ہے۔

کچھ لاشوں کی شناخت ممکن ہوچکی ہے اور اب تک 6 میتوں کو لواحقین کے حوالے کردیا گیا ہے۔ دیگر لاشوں کی شناخت کے لیے ڈی این اے سمپلنگ کا کام جاری ہے۔ اس سلسلے میں کراچی یونی ورسٹی کی ڈی این اے لیب کام کررہی ہے۔

درج ذیل فہرست ان افراد کی ہے جن کی میتوں کی اب تک شناخت ہوئی ہے۔ یہ فہرست سرکاری طور پر میڈیا کو جاری کی گئی ہے۔

اس فہرست کو اپ ڈیٹ کیا جاتا رہے گا۔ اس فہرست میں صرف وہ نام درج ہیں جن کے اہلِ خانہ نے میتوں کو شناخت کرلیا ہے۔

جناح اسپتال کراچی میں 66 لاشیں لائی گئیں جن میں 20 خواتین کی تھیں۔ تین لاشیں بچوں کی تھیں۔اب تک 17 میتوں کی شناخت ہوچکی ہے اور 49 کی ہونا باقی ہے۔

ہفتے کی دوپہر 2 بجے تک کی تفصیلات:۔

علیزہ شہریار ولد میجر شہریار۔

عمار راشد ولد راشد محمود۔

کیپٹن سجاد۔

دلشاد احمد ولد مبین احمد۔

فریال بیگم زوجہ اسد اللہ۔

فریحہ رسول ولد غلام رسول۔

فرحان ولد عبدالقادر۔

اقرا شاہد ولد شاہد۔

ماہم زوجہ میجر شہریار۔

محمد احمد ولد سید جمال احمد۔

محمد طاہر ولد عبدل۔

ندا وقاص بنت عرفان اللہ۔

شہناز پروین زوجہ امان اللہ خان۔

شعیب رضا ولد شریف رضا۔

سیدہ صائمہ عمران زوجہ سید عمران حسن۔

وقاص طارق ولد محمد طارق۔

فروہ علی بنت ندیم علی

کراچی کے سول اسپتال میں 31 لاشیں لائی گئی ہیں۔ ان میں سے 6 خواتین اور 25 مرد ہیں۔28 لاشوں کی شناخت ہونا باقی ہے جبکہ 3 کی شناخت ہوچکی ہے۔

جن کی شناخت ہوچکی ہے ان میں لیفٹینٹ بالاج ، ان کی  میت سی ایم ایف ملیر منتقل کردی گئی ۔

میجر شہریار،ان کی میت سی ایم ایچ ملیرمنتقل کردی گئی۔

سید دانش شاہ ولد سید احد شاہ۔

دیگر لاشوں کی شناخت کے لیے ڈی این اے سیمپلز لے لئے گئے ہیں۔

اس خبر کو مزید تفصیلات کے ساتھ اپ ڈیٹ کیا جاتا رہے گا۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube