Monday, September 28, 2020  | 9 Safar, 1442
ہوم   > پاکستان

آل سندھ پرائيويٹ اسکولزاينڈکالجزايسوسی ايشن کاتعليمی ادارےکھولنےکامطالبہ

SAMAA | - Posted: May 10, 2020 | Last Updated: 5 months ago
SAMAA |
Posted: May 10, 2020 | Last Updated: 5 months ago

طویل بندش کافیصلہ مسترد

کراچی میں آل سندھ پرائيويٹ اسکولز اينڈ کالجز ايسوسی ايشن نے15 جون سے تعليمی ادارے کھولنے کا مطالبہ کرديا۔

ايسوسی ايشن کے چيئرمين حيدرعلی نے کہا ہے کہ کرونا وائرس کے باعث کراچی میں تعلیمی اداروں کی چھٹيوں ميں صرف ايک سے دو ہفتے کا اضافہ کيا جاسکتا ہے۔ انھوں نے کہا کہ تمام ادارے طلبہ وطالبات کیلیے15 جون سےکھول دیےجائیں۔

حیدرعلی نے دو ٹوک کہا کہ تعلیمی اداروں کی طویل بندش کےفیصلےکومستردکرتےہیں،امتحانات کی منسوخی کے وفاق کی جانب سے اعلان کو بھی مستردکرتےہیں۔ حیدرعلی نے تجویز دی کہ ہفتےمیں4دن، روزانہ2شفٹ میں اسکول کھولے جاسکتےہیں، امتحانات بھی احتیاط اورنئےشیڈول کےساتھ منعقدہوسکتےہیں۔

نویں سے بارہویں جماعت کے امتحانات کے لیے تجاویز دیتے ہوئے انھوں نے کہا کہ امتحانات کے یکسر منسوخ ہونے سے بہت ساری پیچیدگیاں پیدا ہوں گی جنہیں حل کرنے میں اسکولز، والدین اور تعلیمی بورڈز سب ہی مہینوں پریشان رہیں گے۔ایک یا زیادہ پیپرز میں فیل بچے، نویں اور گیارہویں جماعت کے نتیجے کا معیار، امپرومنٹ کے امیدوار، پرائویٹ امتحان دینے والے، دوسرے بورڈز کے بچے اور ان گنت پریشانیاں سب کےلئے دشواری کا سبب ہوں گی۔

نہم دہم جماعت کے امتحانات یکم جولائی سے15 جولائی تک اورانٹرمیڈیٹ کےامتحانات مرحلہ وار20 جولائی سے 20 اگست تک لیےجائیں۔امتحانی مراکزکی تعداد میں اضافہ کیا جائےاور زیادہ سے زیادہ 150 سے 200 بچوں کی تعداد رکھی جائے۔ امتحانی مراکز میں داخلے اور باہر نکلنے کے دوران فاصلہ رکھ کر قطار بنوائی جا سکتی ہے۔ امتحانی مراکز کے داخلی راستے پر تھرمل اسکینر ڈیوائس اورسینیٹائزنگ واک تھرو گیٹ کا انتظام کیا جائے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube