Thursday, October 1, 2020  | 12 Safar, 1442
ہوم   > پاکستان

ہمارے مطالبات نہ مانےتوٹیچرزکونکال دینگے،پرائیوٹ اسکولزایسوسی ایشن

SAMAA | - Posted: May 9, 2020 | Last Updated: 5 months ago
SAMAA |
Posted: May 9, 2020 | Last Updated: 5 months ago

نیشنل پرائیویٹ ایسو سی ایشن نے دھمکی دیتے ہوئے کہا ہے کہ اگر حکومت نے ہمارے مطالبات تسلیم نہ کیے تو اسکولوں کو بند کرکے تمام ٹیچروں کو نوکریوں سے فارغ کردیں گے۔

اسلام آباد میں ہفتہ 9 مئی کو پریس کانفرنس کرتے ہوئے نیشنل ایسوسی ایشن آف پرائیویٹ اسکولز کی پریس کانفرنس کے سربراہ چوہدری عبید کا کہنا تھا کہ ہم کرونا کو شکست دینے کا حوصلہ رکھتے ہیں، اسکولوں میں نیا سیشن شروع ہونا تھا تاہم کرونا کی وجہ سے اسکولوں کو بند کرنا پڑا۔

انہوں نے کہا کہ اسکولوں کی بندش سے اسکول مالکان، 14 لاکھ ٹیچرز اور 5 لاکھ نان ٹیچنگ متاثر ہیں، ہم حکومت سے کچھ گزارشات کرنا چاہتے ہیں۔ اس موقع پر انہوں نے 15 جولائی تک تعلیمی اداروں کو بند رکھنے کے فیصلے کی بھی مخالفت کی۔ چوہدری عبید نے کہا کہ 15 جولائی تک اسکول بند کرنے کا حکومتی فیصلہ غیر دانشمندانہ ہے، اس سے ملک کے تعلیمی اداروں کو ناقابل تلافی نقصان پہنچے گا۔

چوہدری عبید کا مزید کہنا تھا کہ تعلیمی ادارے اتنا نقصان نہیں برداشت کر سکتے، حکومت ہماری بحالی کیلئے بیل کوئی ریلیف پیکج دے، جب کہ اسکولوں کے ایڈمن آفسز کھولنے، یوٹیلیٹی بلز بھی معاف کئے جائیں۔ انہوں نے والدین سے بھی درخواست کرتے ہوئے کہا کہ والدین فیس ہر ماہ لازمی ادا کریں، بلز کو کمرشل سے ڈومیسٹک کئے جائیں، طالبعلموں کے لئے ریلیف فنڈ قائم کئے جائیں۔

پریس کانفرنس کے اختتام پر انہوں نے دھمکی دیتے ہوئے کہا کہ اگر ہمارے مطالبات نہ مانے گئے تو ہم اسکولز بند کر کہ ٹیچرز کو نکال دیں۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube