Thursday, October 1, 2020  | 12 Safar, 1442
ہوم   > پاکستان

اسسٹنٹ پروفیسرنے بیٹےکی مدد سے آن لائن کلاسز شروع کردیں

SAMAA | - Posted: Apr 20, 2020 | Last Updated: 5 months ago
SAMAA |
Posted: Apr 20, 2020 | Last Updated: 5 months ago

بارہ سالہ عباس ویڈیو پروڈکشن، ایڈیٹنگ کاہنربھی سیکھ رہا ہے

پنجاب یونیورسٹی کی اسسٹنٹ پروفیسر ڈاکٹر حنا بتول نے تعلیمی ادارے بند ہونے کے باعث طلبہ کو آن لائن لیکچر دینا شروع کر دیے۔

ڈاکٹر حنا بتول کہتی ہیں کہ اس سے طلبا کا فائدہ تو ہے ہی ساتھ ہی ان کا 12 سالہ بیٹا ویڈيو پروڈکشن اور ايڈيٹنگ کا ہنر بھی سيکھ رہا ہے۔

اسسٹنٹ پروفيسر کے مطابق شروع میں انہیں یہ کام بہت مشکل لگا لیکن پھر میں نے اپنے بیٹے کی مدد لی کیونکہ آجکل کے بچوں کی ٹیکنالوجی سے خاصی واقفیت ہے۔ میرے بیٹے نے میرے آن لائن لیکچرز کی شوٹنگ اور ایڈینگ میں بہت مدد کی۔

ڈاکٹر حنا بتول کہتی ہیں کہ میں آج تک جتنے بھی آن لائن لیکچرز دے رہی ہوں اُس سارے عمل میں میرا بیٹا میری بہت مدد کرتا ہے۔ گھر پر رہ کر آپ اپنے بچوں کی اِن صلاحیتوں سے فائدہ اٹھا سکتے ہیں۔ جتنا بھی آپ یہ اسٹوڈیو دیکھ رہے ہیں جو میرے گھر میں بنا ہوا ہے یہ تمام میرے بیٹے نے خود بنایا ہے۔

گھر کے ڈرائنگ روم کو آن لائن کلاس روم میں تبديل کر دیا گیا ہے۔ پروفیسر کا 12 سالہ بیٹا عباس اس کام میں سيٹ ڈيزائنر، پروڈيوسر اور ايڈيٹر بھی ہے۔

عباس بتاتا ہے کہ چھٹیوں کے دوران میری ماما نے کہا کہ تم میرے آن لائن لیکچرز بنا دو۔ مجھے اِن چیزوں کا پہلے سے پتہ تھا تو میں نے کہا کہ ٹھیک ہے میں کر دیتا ہوں۔ کچھ میں نے آئن لائن ٹپس لیے اور کچھ چیزیں جن کی مجھے ضرورت تھی وہ میں نے آن لائن منگوائی جس کے بعد سارا سیٹ اپ کر کے اَب میں آن لائن لیکچرز بناتا ہوں اور پھر اُسے ایڈٹ کر کے یوٹیوب پر ڈال دیتا ہوں۔

پروفيسر حنا بتول کے مطابق اس سے اُن کا کام بھی ہو جاتا ہے اور بيٹے کو نئی چیزیں سيکھنے کا موقع بھی مل گيا ہے۔ تمام والدين کو چاہيے کہ وہ چھٹيوں کے دوران بچوں کو مصروف رکھنے کےليے نئی اور مفيد چيزيں سکھائيں۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube