Sunday, September 20, 2020  | 1 Safar, 1442
ہوم   > پاکستان

پیتھالوجیکل آٹاپسی کےبنا مریض کی موت کرونا کوقراردینادرست نہیں،پولیس سرجن

SAMAA | - Posted: Apr 16, 2020 | Last Updated: 5 months ago
SAMAA |
Posted: Apr 16, 2020 | Last Updated: 5 months ago

محتاط رہيں اوراپناٹیسٹ بھی کروائیں

پولیس سرجن کراچی ڈاکٹر قرارعباسی کا کہنا ہے کہ بغیر پیتھالوجیکل آٹاپسی کسی مریض کے کرونا وائرس سے جاں بحق ہونے کا دعویٰ کرنا غلط ہے،پیتھالوجیکل آٹاپسی کا مقصد لواحقین کو جان لیوا بیماری کے بارے میں بتانا ہوتا ہے کہ وہ محتاط رہيں اور اپنا ٹیسٹ بھی کروائیں۔

کراچی پولیس سرجن ڈاکٹر قرارعباسی نےسماء سے بات کرتے ہوئے بتایا کہ کسی سرکاری اسپتال میں ایک بھی پیتھالوجیکل آٹاپسی نہیں کی گئی ہے،قدرتی طورپرمرنےوالے افراد کی پیتھالوجیکل آٹاپسی کی جاتی ہے۔

ڈاکٹر قرارعباسی کا کہنا تھا کہ پیتھالوجیکل آٹاپسی سے پتہ چلتا ہےکہ مرنےوالاکس مرض میں مبتلاتھا،بغیرپیتھالوجیکل آٹاپسی کہناکہ مریض کروناوائرس سےجاں بحق ہوا،غلط ہے۔

پولیس سرجن نے مزید بتایا کہ مرنے والے99 فیصد افراد میں کارڈیو ریسپائریٹری اریسٹ وجہ موت بنتی ہے، مطلب پہلے پھیپھڑے کام کرنا بند کرتے ہیں جس کی وجہ سے ہارٹ فیل ہو جاتا ہے۔

انھوں نے یہ بھی وضاحت کردی کہ اگر مریض کے پھیپھڑے کام نہیں کررہےتھےتوشبہ ہےکہ کروناوائرس ہوگا،یہ کہنا بھی غلط ہے۔

ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ پیتھالوجیکل آٹاپسی کا مقصد لواحقین کو اس جان لیوا بیماری کے بارے میں بتانا ہوتا ہے کہ وہ محتاط ہوں اوراپنا ٹیسٹ کروائیں۔

ڈاکٹر قرارعباسی کا کہنا تھا کہ کوئی بھی جان لیوا مرض جب اپنی انتہا کو پہنچتا ہے تو پھیپھڑے کام کرنا چھوڑ دیتے ہیں جس کی وجہ سے موت واقع ہو جاتی ہے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube