ہوم   > پاکستان

کرونا بزرگوں سمیت تمام پاکستانیوں کے لیے خطرہ ہے، عمران خان

SAMAA | - Posted: Apr 8, 2020 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: Apr 8, 2020 | Last Updated: 2 months ago

پاکستان کے لاک ڈاؤن ميں فرق سمجھنا ہوگا

وزيراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ کرونا ہر ملک میں مختلف انداز میں پھیلا ہے،لوگ سمجھتے ہيں کہ شايد پاکستانيوں ميں قوتِ مدافعت ہے،ايسی غلط فہمی ميں کوئی نہ رہے، يہ وائرس بزرگ افراد کيلئے بہت خطرناک ہے۔ وزیراعظم نے واضح کردیا کہ کرونا 2 سے 3 ہفتوں میں ختم نہیں ہوگا، ہمارے پاس مغربی ممالک کی طرح وسائل نہیں ہیں،ساری قوم مل کر ہی اس مشکل مرحلے سے نکل سکتی ہے۔

بدھ کو اسلام آباد میں میڈیا نمائنداگان سے بات کرتے ہوئے وزيراعظم عمران خان نے بتایا کہ ہر ملک کے اندر کرونا وائرس کا پھيلاؤ مختلف ہے،پاکستان ميں لوگ سمجھتے ہيں کہ ان پر بيماری اثر نہيں کرے گی۔

عمران خان نے کہا کہ خدا کا واسطہ ايسی غلط فہمی ميں نہ پڑيں،يہ بيماری بزرگوں کيلئے انتہائی خطرناک ہے،ڈر ہے کہ يہ بيماری پھيلی تو اتنے وينٹی ليٹرز نہيں ہونگے۔

انھوں نے مزید کہا کہ ہر 100 ميں سے ايک فرد بيماری سے متاثر ہوسکتا ہے،احتياط کريں تو بڑے مسئلے سے بچ سکتے ہيں،جتنے زيادہ لوگ جمع ہوں گے اتنا زيادہ وائرس پھيلے گا۔

وزيراعظم نے یہ بھی کہا کہ پاکستان کو کرونا وبا جيسے بڑے چيلنج کا سامنا ہے، سب کو ذمہ داری لينی ہے اور احتياط کرنا ہے،کوشش یہ ہے کہ بیماری بھی نہ پھیلے اورکمزور طبقہ بھی متاثرنہ ہو۔

عمران خان نے بتایا کہ چين، امريکا اور پاکستان کے لاک ڈاؤن ميں فرق سمجھنا ہوگا، پاکستان کے5کروڑلوگ غربت کی لکيرکےنيچے ہیں،لاک ڈاؤن کا ويسے نہيں سوچ سکتے،جيسے امريکا چين سوچتاہے،مختلف ممالک نے مختلف طریقے سے اقدامات کیے ہیں۔

وزیراعظم نے بتایا کہ ایک خاندان کو جمعرات کو احساس پروگرام کے تحت12ہزار روپے دیے جائیں گے اور اس پروگرام میں کسی طرح کی سیاسی مداخلت نہیں کی۔

احساس پروگرام سے متعلق انھوں نے بتایا کہ اس پروگرام کا سارا ڈيٹا نادرا سے ليا گيا ہے،فنڈز کی تقسيم 17 ہزار مراکز سے کی جائے گی، دو سے ڈھائی ہفتے ميں تمام مستحقين کو امداد پہنچ جائے گی۔

وزيراعظم نے لاک ڈاؤن سے متعلق یہ بھی کہا کہ چین نے جب لاک ڈاؤن  کیا تو گھروں تک کھانا پہنچایا، لاک ڈاؤن جب ہی کامیاب ہوگا جب لوگوں کے گھروں تک کھانا پہنچے گا۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube