ہوم   > پاکستان

بلوچستان فوڈ اتھارٹی کے کھانے پینے کے 6مراکز پر جرمانے

SAMAA | - Posted: Apr 8, 2020 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: Apr 8, 2020 | Last Updated: 2 months ago

کوئٹہ میں بلوچستان فوڈ اتھارٹی کی غیرمعیاری و مضر صحت اشیاء کی فروخت کرنے والے فوڈ سینٹرز کے خلاف کاروائیاں جاری ہیں

ترجمان بلوچستان فوڈ اتھارٹی کے مطابق فوڈ سیفٹی کے عملے نے سیٹلائٹ ٹاون کے علاقے میں کارروائی کرتے ہوئے 6 کھانے پینے کے مراکز پر جرمانے عائد کر دیے۔ مذکورہ مراکز کے خلاف کارروائی غیر معیاری اور مضر صحت اشیاء کی فروخت، صفائی کے ناقص انتظامات اور زائدالمیعاد اشیاء کی موجودگی پر کی گئی۔

ڈپٹی ڈائریکٹر آپریشنز نقیب اللہ ناصر کی سربراہی میں بی ایف اے کی معائنہ ٹیم نے چیکنگ کے دوران مختلف ملک شاپس، سویٹس اینڈ بیکرز، جنرل اسٹورز اور جوس کارنرز کا معائنہ کرتے ہوئے وہاں فروخت ہونے والی اشیاء خورنوش کے معیار اور صفائی کی صورتحال کا جائزہ لیا۔

علاوہ ازیں فوڈ اتھارٹی حکام نے متعدد کھانے پینے کے مراکز کو حفظان صحت کے اصولوں کے مطابق عوام کو معیاری و محفوظ خوراک کی فراہمی یقینی بنانے کی ہدایت کی جبکہ مراکز مالکان کو صفائی کی صورتحال میں بہتری کےلیے فوری اقدامات کرنے اور بلوچستان فوڈ اتھارٹی کے وضع کردہ اسٹینڈرڈز کے مطابق غذائی اشیاء کی تیاری و فروخت کے حوالے سے آگاہی دی گئی۔

اس ضمن میں اصلاحی نوٹسز اور بی ایف اے کے خصوصی ہدایت نامے بھی جاری کیے گئے۔

بلوچستان فوڈ اتھارٹی کے مطابق صوبہ بھر میں مختلف مشروبات کی پروڈکشن و فروخت پر بلوچستان فوڈ اتھارٹی ایکٹ 2014 کے تحت فوری طور پر پابندی عائد کردی گئی ہے۔

سلسبیل ایپل فوڈ ڈرنک، اسٹار ریڈ پیچ، اسٹار فریش لائم، ترانا مینگو ڈرنک، ترانا ایپل ڈرنک، میری گولڈ ڈرنک، جسٹ فروٹ مینگو ڈرنک اور فروٹی ریڈ انار ڈرنک کی لیبارٹری ٹیسٹ رپورٹ غیر تسلی بخش آنے جبکہ مذکورہ مشروبات میں حفظان صحت کے اصولوں کے برخلاف غیرمعیاری و مضر صحت اجزاء کی موجودگی پر پابندی عائد کی گئی۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube