ہوم   > پاکستان

پی آئی اے کے 2 پائلٹس میں کرونا وائرس کی تصدیق

SAMAA | - Posted: Apr 6, 2020 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: Apr 6, 2020 | Last Updated: 2 months ago
اے ایف پی

محکمہ صحت پنجاب نے کینیڈا کے شہر ٹورنٹو سے لاہور آنے والے 2 پائلٹس میں کرونا وائرس کی تصدیق کی ہے۔

دونوں پائلٹس ہفتہ کے روز کینیڈا سے واپس آئے۔ پائلٹس دیگر افراد کے ہمراہ فلائٹ بندش کے باعث ٹورنٹو ایئرپورٹ پر پھنسے ہوئے تھے۔

دونوں افراد کو وائرس کی تشخیص کے بعد نجی اسپتال کے آئیسولیشن وارڈز میں منتقل کردیا گیا ہے۔ وزیر صحت پنجاب ڈاکٹر یاسمین کا کہنا ہے کہ دونوں پائلٹس کی حالت بہتر ہے، جب کہ منفی ٹیسٹ کے حامل عملے کے دیگر 3 ارکان کو 15 دن الگ رہنے کی ہدایت کی گئی ہے۔

واضح رہے کہ پنجاب میں اب تک 1 ہزار سے زائد کرونا وائرس کے تصدیق شدہ کیسز سامنے آئے ہیں۔

دوسری جانب سندھ میں صوبائی حکومت اور پی آئی اے پائلٹس میں اختلافات سامنے آگئے۔ پی آئی اے کے 4 پائلٹس کو قرنطینہ کرنے پر پی آئی اے کی جانب سے شدید احتجاج کیا گیا۔ پی آئی نے اس فیصلے پر احتجاجاً فضائی آپریشن بند کرنے کی دھمکی دے دی۔ سی ای او ارشد ملک کا کہنا تھا کہ پی آئی اے عملے کے بارے میں کرونا وائرس کی موجودگی کی اطلاعات گمراہ کن ہیں۔

سی ای او پی آئی اے کا مزید کہنا تھا کہ خالی طیارے کی لندن سے واپسی سے 3 گھنٹے پہلے ہی تمام حکام کواطلاع کردی گئی تھی، تاہم محکمہ صحت سندھ کے عملے نے پائلٹس کو زبردستی قرنطینہ کرنے پر اصرار کیا۔

معاملے پر پاکستان ائیرلائن پائلٹس ایسوسی ایشن نے حفاظتی انتظامات کی عدم دستیابی پرڈی بریف نوٹ لکھ دیا، جس میں کہا گيا ہے کہ پی آئی اے انتظاميہ سول ايوی ايشن اتھارٹی کی ہدايت پر عمل نہيں کررہی ہے۔ واضح رہے کہ بعد ازاں کرو اور پائلٹس کے منفی کرونا ٹیسٹ آنے پر انہیں قرنطینہ سے جانے کی اجازت دے دی گئی تھی۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube