Tuesday, September 22, 2020  | 3 Safar, 1442
ہوم   > پاکستان

آئندہ6سے8ہفتوں ميں کيسزبلند ترين سطح پرجائينگے،ڈاکٹرجاوید

SAMAA | - Posted: Apr 5, 2020 | Last Updated: 6 months ago
SAMAA |
Posted: Apr 5, 2020 | Last Updated: 6 months ago

ماسک سے زیادہ فاصلہ رکھنا مؤثر ترین ہے

امريکا ميں کرونا کے مريضوں کا علاج کرنے والے پاکستانی نژاد ڈاکٹر جاويد امام کہتے ہيں کہ آئندہ 6 سے 8 ہفتوں ميں کيسز بلند ترين سطح پر جائيں گے۔

سما کو دیئے گئے خصوصی انٹرویو میں امریکی شہر شکاگو سے تعلق رکھنے والے پاکستانی نژاد امریکی ڈاکٹر جاويد امام نے کہا کہ پاکستانی حکومت نے کرونا سے بچاؤ کے ليے بروقت اقدامات کئے، مگر امريکا ميں 4 سے 6 ہفتے کا وقت ضائع کيا گيا۔

انہوں نے کہا کہ کرونا کا شکار نوجوان دوسروں کیلئے بڑا خطرہ ہیں۔ کرونا سے کم عمر مرنے والے افراد میں کوئی نہ کوئی چھپی بیماری ہوسکتی ہے۔ ڈاکٹر جاوید نے خبردار کرتے ہوئے کہا کہ کرونا اب فلو کی طرح سیزنل ہوگا۔

ڈاکٹر جاوید امام کا یہ بھی کہنا تھا کہ کرونا کی ویکسین ایک ڈیڑھ سال تک آئے گی۔ کرونا کیلئے ماسک بھی زیادہ مؤثر نہیں، بس فاصلہ رکھیں۔

دوسری جانب پاکستان کے معروف سائنس دان ڈاکٹر عطاء الرحمان نے کرونا وائرس کے حوالے سے خبردار کیا ہے کہ ایک بڑا طوفان آرہا ہے۔ خطرے کو سامنے رکھنا ہوگا۔

ڈاکٹر عطاء الرحمان نے کہا ہے کہ ابھی تک ہم کرونا وائرس کو کنٹرول نہیں کرسکے ہیں۔ متاثرہ افراد کی تعداد دگنی ہوتی جارہی ہے۔ ملک میں ہم اچھے انداز میں ٹیسٹ نہیں کر پا رہے۔ ایک دن میں ٹیسٹ کی تعداد بہت زیادہ ہونی چاہیے۔

انہوں نے انکشاف کیا کہ پاکستان میں ویکسین کے حوالے سے ٹرائل شروع ہوچکے ہیں لیکن میں فی الحال ویکسین کو بھول جانا چاہیے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube