ہوم   > پاکستان

ایم کیو ایم اگلے ماہ کابینہ میں واپس آئے گی

SAMAA | - Posted: Mar 25, 2020 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: Mar 25, 2020 | Last Updated: 2 months ago

متحدہ قومی موومنٹ پاکستان نے کراچی اور حیدر آباد کیلئے فنڈز کی فراہمی کی یقین دہانی کے بعد وفاقی کابینہ میں دوبارہ شمولیت کا فیصلہ کرلیا۔

ایم کیو ایم پاکستان کے سینئر رہنماء نے سماء ڈیجیٹل سے گفتگو کرتے ہوئے اس بات کی تصدیق کی ہے کہ اپریل کے پہلے ہفتے میں دوبارہ کابینہ کا حصہ بننے جارہے ہیں۔ امید ہے کہ اس وقت تک عالمی وباء کرونا وائرس کا خاتمہ ہوجائے گا۔

حکومتی اتحادی جماعت کو دی گئی انفارمیشن ٹیکنالوجی کی وزارت برقرار رہے گی جبکہ اس کے ساتھ وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے ڈیولپمنٹ اینڈ پلاننگ کا عہدہ بھی ملے گا۔

ایم کیو ایم پاکستان کے رکن قومی اسمبلی امین الحق کو وفاقی وزیر برائے انفارمیشن ٹیکنالوجی کا عہدہ دیا جائے گا۔ پارٹی نے معاون خصوصی کیلئے فیصل سبزواری کا نام دیا ہے۔

سینئر رہنماء نے مزید بتایا کہ متحدہ کی جانب سے یہ نام گورنر سندھ عمران اسماعیل کے 22 مارچ کو ایم کیو ایم پاکستان کے مرکز بہادر آباد کے دورے کے موقع پر دیئے گئے تھے۔

انہوں نے بتایا کہ وفاقی حکومت نے ان کے مطالبات منظور کرلئے ہیں۔ وفاقی حکومت کراچی اور حیدر آباد کیلئے ترقیاتی فنڈز جاری کرنے پر بھی آمادہ ہے۔

یہ فیصلہ کیا چکا ہے کہ وفاقی حکومت کراچی اور حیدر آباد کے ترقیاتی کاموں کیلئے 7 ارب روپے کی رقم جاری کرے گی۔ انہوں نے تصدیق کی کہ کراچی کیلئے 6 ارب اور حیدر آباد کیلئے ایک ارب روپے کی رقم مختص کی گئی ہے جبکہ وفاقی حکومت کی جانب سے ایک ارب روپے کی قسط سندھ انفرااسٹرکچر ڈیولپمنٹ کمپنی لمیٹڈ کو جاری کی جاچکی ہے۔

یہ بھی فیصلہ کیا گیا ہے کہ ان فنڈز کے ذریعے کئے جانے والے ترقیاتی کاموں کی نگرانی کراچی میٹروپولیٹن کارپوریش اور حیدر آباد میٹرو پولیٹن کارپوریشن کریں گی۔

متحدہ رہنماء کا کہنا ہے کہ یہ فنڈز براہ راست کے ایم سی اور ایچ ایم سی کے تحت استعمال کئے جائیں گے اور ان منصوبوں کی نگرانی یونین کونسل کی سطح پر کی جائے گی۔

حیدر آباد میں یونیورسٹی کے قیام کیلئے گورنر سندھ کی زیر صدارت ایک کمیٹی قائم کردی گئی ہے، اراکین قومی اسمبلی صابر حسین قائم خانی، محمد صلاح الدین اور میئر حیدرآباد طیب حسین بھی کمیٹی میں شامل ہوں گے، یہ کمیٹی یونیورسٹی کی فزیبلیٹی رپورٹ تیار کرے گی۔

پی ٹی آئی کے رکن سندھ اسمبلی خرم شیر زمان نے سماء ڈیجیٹل سے گفتگو میں تصدیق کی ہے کہ انہوں نے ایم کیو ایم کے مطالبات تسلیم کرلئے ہیں۔

ایم کیو ایم پاکستان نے جنوری 2020ء میں وفاقی کابینہ سے علیحدگی اختیار کرلی تھی جب کنوینر ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی نے وفاقی وزیر انفارمیشن ٹیکنالوجی کے عہدے سے استعفیٰ دے دیا تھا۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube