ہوم   > پاکستان

بائیومیٹرک حاضری بند،عوامی مراکز پرحفاظتی اقدامات لمحہ فکریہ

SAMAA | - Posted: Mar 20, 2020 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: Mar 20, 2020 | Last Updated: 2 months ago

اے ٹی ایمز اور بائیو میڑک سمز رجسٹریشن وائرس پھیلاؤکی وجہ بن سکتے ہیں

کرونا سے بچاؤ کیلئے سرکاری اور نجی دفاتر میں تو بائیو میڑک حاضری بند کردی گئی ہے لیکن سم رجسٹریشن اور منی ٹرانسفر شاپس پربائیو میڑک جاری ہے۔عوام کہتے ہیں کہ اے ٹی ایمزاور بائیو میڑک سمز رجسٹریشن وائرس پھیلاؤکی وجہ بن سکتے ہیں۔

سرکاری دفاتر میں بائیو میٹرک حاضری بند ہے۔ دفتر میں انٹری سے پہلے سینٹائزر کا استعمال ضروری قرار دیا گیا ہے۔ ایک طرف کرونا سے بچاؤ کے لیے یہ حفاظتی اقدمات کئے گئے ہیں تودوسری جانب موبائل فونزشاپس پر بائیو میٹرک ،ایزی پیسہ اورسم رجسٹریشن کی صورت میں خطرات برقرار ہیں۔

اے ٹی ایم بوتھز کے باہر کوئی سینٹائزر نہیں ہے اور نہ ہی ہاتھ دھونے کا انتظام ہے۔

عوام کا کہنا ہے کہ کرونا وائرس کے باعث پیداہونے والی ہنگامی صورتحال میں وائرس کے پھیلاؤ کا سبب بننے والےان تمام معاملات پر بھی کڑی نظر رکھنا ہوگی۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube