Tuesday, January 18, 2022  | 14 Jamadilakhir, 1443

پاکستان آمد پر کرونا نیگیٹو رپورٹ دکھانا لازمی قرار

SAMAA | - Posted: Mar 18, 2020 | Last Updated: 2 years ago
SAMAA |
Posted: Mar 18, 2020 | Last Updated: 2 years ago

حکومت پاکستان نے بیرون ملک سے آنے والے تمام مسافروں کیلئے روانگی سے 24 گھنٹے قبل کرونا وائرس کا ٹیسٹ لازمی قرار دیا ہے۔ 

سول ایوی ایشن کے ایڈیشنل ڈائریکٹر برائے نیشنل ریگولیشنز راشد زبیری نے سماء ڈیجیٹل کو بتایا کہ یہ فیصلہ 21 مارچ کو صبح 5 بجے سے نافذ العمل ہوگا اور اس کا اطلاق ممکنہ طور پر اگلے 15 روز تک ہوگا۔

انہوں نے بتایا کہ متعدد شہری فون کرکے دریافت کر رہے ہیں کہ جس ملک سے وہ لوگ پاکستان آرہے ہیں وہاں ٹیسٹنگ کٹس کمیاب ہونے کی صورت میں وہ کیا لائحہ عمل اختیار کریں۔ راشد زبیری کا کہنا تھا کہ بہرحال یہ حکومت کا فیصلہ ہے اور اس پر عمل لازمی ہے۔

ایف آئی اے امیگریشن کی اسسٹنٹ ڈائریکٹر رابعہ قریشی نے سماء ڈیجیٹل سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ اس فیصلہ پر عملدرامد  کے حوالے سے ایف آئی اے اور سول ایوی ایشن سمیت دیگر متعلقہ محکموں کے مشترکہ اجلاس جلد منققد ہوں گے۔

ماتحت افسران فی الوقت یہ سمجھنے سے قاصر ہیں کہ مذکورہ حکم پر عملدرامد کس طرح کرایا جائے۔

متعلقہ حکام کو دئے گئے نوٹس کے مطابق بیرون ملک سے آنے والے ہر مسافر کو آمد پر کرونا ٹیسٹ کے نتیجے کی کاپی فراہم کرنی ہوگی اور وہ ٹیسٹ ان کی بورڈنگ سے 24 گھنٹے قبل ہوا ہو۔

یہ فیصلہ ایسے وقت میں آیا ہے جب دنیا کرونا وائرس کی عالمی وبا کے باعث سخت تشویش میں مبتلا ہے جو اب تک 150 سے زائد ممالک میں لوگوں کو متاثر کرچکی ہے۔ موجودہ صورتحال کے پیش نظر دنا کے رہنما اور ماہرین صحت لوگوں کو بلا ضرورت کرونا وائرس کا ٹیسٹ نہ کرانے کا مشورہ دے رہے ہیں۔

وزیر اعظم عمران خان نے بھی منگل کو اپنے خطاب میں عوام کو احتیاطی تدابیر اختیار کرنے کے ساتھ اسی بات کا مشورہ دیا تھا۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube