ہوم   > پاکستان

چین سےطلباکی واپسی،وفاقی کابینہ سےفیصلےکی کاپی طلب

SAMAA | - Posted: Mar 13, 2020 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: Mar 13, 2020 | Last Updated: 2 months ago

فوٹو: اے ایف پی

اسلام آباد ہائیکورٹ میں والدین کی درخواست کے بعدعدالت نےحکومت سے کابینہ فیصلےکی کاپی طلب کرلی۔عدالت نے استفسار کیا کہ حکومت چین میں پھنسے طلباء سے متعلق اپنی پالیسی کیوں نہیں بتاتی؟ چیف جسٹس اطہر من اللہ نے ریمارکس دیئے کہ پالیسی معاملے پر حکومت کو کیسے حکم دے سکتے ہیں؟۔

جمعہ کو چین میں پھنسے پاکستانی طلباء کی واپسی کے کیس کی اسلام آباد ہائیکورٹ میں سماعت ہوئی جس میں متاثرہ والدین کا کہنا تھا کہ اب برداشت ختم ہوچکی ہے،عدالت رمضان سے پہلے طلباء کو واپس لانے کا حکم دے۔

چیف جسٹس اطہرمن اللہ نے ریمارکس دیئے کہ پوری دنیا میں کرونا کے بعد جو ہورہا ہے اس کو دیکھتے ہوئے ہم حکم دیں بھی تو کیا ؟ ویسے بھی پالیسی معاملے پر عدالت حکومت کو کیسے حکم دے سکتی ہے؟

طلباء کے والدین کا کہنا تھا کہ حکومت معاملے پر اپنی پالیسی تو بتائے، سرکار اگر طلباء کو واپس نہیں لا سکتی تو ماں باپ کو اُن کے پاس بھیج دے،تفتان سے 10 ہزار لوگوں کی واپسی کی اجازت دی جاسکتی ہےتوچین میں پھنسے طلباء کو کیوں نہیں؟ سرکاری وکیل نے بتایا کہ یہ معاملہ وفاقی کابینہ میں اٹھایا گیا ہے۔

عدالت عالیہ نے کابینہ کے فیصلے کی کاپی آئندہ سماعت پر طلب کرلی۔ کیس کی مزید سماعت 20 مارچ کو ہوگی۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube