Monday, January 24, 2022  | 20 Jamadilakhir, 1443

رحیم یارخان، جھوٹامقدمہ درج کرنے پر ایس ایچ او گرفتار

SAMAA | - Posted: Mar 12, 2020 | Last Updated: 2 years ago
SAMAA |
Posted: Mar 12, 2020 | Last Updated: 2 years ago

پنجاب کے ضلع رحیم یار خان میں شہری کے خلاف جھوٹا مقدمہ درج کرنے پر ایس ایچ او سمیت تین پولیس اہلکار اور مدعی کو گرفتار کرلیا گیا۔ پولیس ترجمان نے گرفتاری کی تصدیق کردی۔

رحیم یار خان کی تحصیل لیاقت پور میں تھانہ سٹی پولیس نے ظفر اقبال نامی شخص کی مدعیت میں مقدمہ نمبر 117/20درج کیا تھا۔ مدعی مقدمہ نے الزام لگایا تھا کہ مجھ سے اسلحہ کے زور پر 5 لاکھ ساٹھ ہزار روپے چھین لیے گئے ہیں۔

پولیس نے کارروائی کرتے ہوئے دیپال پور اوکاڑہ کے رہائشی افراد کو گرفتار کیا اور ان کی دو کاریں بھی ضبط کرلیں مگر بعد ازاں مبینہ طور پر بھاری رشوت لیکر اور مدعی مقدمہ سے سازباز کرکے مقدمہ خارج کردیا اور گرفتار افراد کو چھوڑ دیا۔

گرفتار شدگان نے رہا ہوکر ضلعی پولیس آفیسر ( ڈی پی او) رحیم یار خان منتظر مہدی کو درخواست دی کہ ان کے خلاف مقدمہ کے اندراج اور اخراج کی تحقیقات کی جائے۔ ڈی پی او نے تحقیقات کے بعد تھانہ سٹی لیاقت پور میں تعینات ایس ایچ او رانا اشرف، اے ایس آئی فقیر حسین گجر، ہیڈ کانسٹیبل محمد صدیق اور مدعی مقدمہ ظفر اقبال کو گرفتار کرکے تھانہ سٹی میں ہی بند کردیا۔

واقعہ کی اطلاع ملتے ہی صحافی تھانہ سٹی پہنچے تو پولیس نے گیٹ بند کردیے اور صحافیوں کو کوریج سے روک دیا۔ ترجمان پولیس نے گرفتاری کی تصدیق کردی ہے۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube