ہوم   > پاکستان

جنوبی پنجاب صوبے کا بل اسمبلی میں پیش کرنےکا اعلان

SAMAA | - Posted: Mar 11, 2020 | Last Updated: 3 months ago
SAMAA |
Posted: Mar 11, 2020 | Last Updated: 3 months ago

وفاقی حکومت نے جنوبی پنجاب صوبے کے قیام کے لیے بل قومی اسمبلی میں پیش کرنے کا اعلان کردیا۔ بل کی دو تہائی اکثریت کے ساتھ منظوری کیلئے دیگر جماعتوں کے ساتھ بھی رابطے کیے جائیں گے۔

بدھ کو وزیر اعظم عمران خان کی سربراہی اجلاس منعقد ہوا جس میں وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی، وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار سمیت جنوبی پنجاب سے تعلق رکھنے والے وفاقی و صوبائی وزرا اور آئی جی پنجاب بھی موجود تھے۔ اجلاس میں جنوبی پنجاب کے عوام سے کئے وعدے کو عملی جامہ پہنانے کا فیصلہ کیا گیا۔

بعد ازاں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے شاہ محمود قریشی نے کہا کہ وزیراعظم نے فیصلہ کیا ہے کہ جنوبی پنجاب صوبے کے قیام کے لیے اسمبلی میں بل پیش کیا جائے گا اور اس پر دیگر سیاسی جماعتوں سے بھی مشاورت کی جائے گی کیونکہ دیگر سیاسی جماعتیں بھی یہ سمجھتی رہی ہیں کہ جنوبی پنجاب کی محرومیوں کا خاتمہ ہونا چاہیے۔ بل پاس کرنے کےلیے اتفاق رائے پیدا کرنے میں کچھ وقت لگے گا۔

وزیر خارجہ نے کہا کہ جنوبی پنجاب میں سیکریٹریٹ قائم کرنے کا بھی فیصلہ ہوا ہے۔ اس کے لیے ساڑھے 3 ارب روپے درکار ہوں گے۔ سیکریٹریٹ کے لیے 1300 اسامیاں درکار ہوں گی۔ آئندہ ماہ تک ایڈیشنل سیکریٹری اور ایڈیشنل آئی جی جنوبی پنجاب تعینات کئے جائیں گے۔ دونوں افسران بہاولپور اور ملتان میں اپنے دفاتر قائم کریں گے۔ ماضی میں وعدے کے مطابق جنوبی پنجاب کو فنڈز نہیں ملا کرتے تھے۔ اب آبادی کے تناسب سے 35 فیصد فنڈ جنوبی پنجاب کے لیے مختص کریں گے۔

شاہ محمود قریشی نے کہا کہ شہبازشریف ماضی میں جنوبی پنجاب کو اس کا حق دینے کی بات کرتے رہے ہیں۔ پچھلے دور میں (ن) لیگ کے پاس دوتہائی اکثریت تھی لیکن انہوں نے کچھ نہیں کیا۔ امید ہے جب بل پیش کریں گے تو پیپلزپارٹی اپنے موقف کے مطابق حمایت کرے گی اور مسلم لیگ ن کے ارکان بھی اپنی قیادت کو قائل کریں گے۔ چاہتے ہیں کہ منتخب ارکان اور عوام کی رائے کو اہمیت دی جائے۔ جنوبی پنجاب کے دارالحکومت کا حتمی فیصلہ منتخب اسمبلی کرے گی۔

WhatsApp FaceBook
PTI

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube