ہوم   > پاکستان

ماسک مصنوعی قلت کیس: صوبائی حکومت ودیگر کو نوٹس

SAMAA | - Posted: Mar 2, 2020 | Last Updated: 3 months ago
SAMAA |
Posted: Mar 2, 2020 | Last Updated: 3 months ago

فوٹو: فائل

سندھ ہائی کورٹ نے حفاظتی ماسک کی مصنوعی قلت سے متعلق کیس میں صوبائی حکومت، وفاقی حکومت، وزارت صحت، پیمرا اور دیگر کو نوٹس جاری کر دیے۔

پیر 2 مارچ کو ملک میں حفاظتی ماسک کی مصنوعی قلت کےخلاف درخواست پر سماعت ہوئی۔ عدالت نے 6 مارچ تک فریقین کو جواب جمع کرانے کا حکم دے دیا۔

دوران سماعت عدالت نے ریمارکس دیے کہ ماسک ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی کے ماتحت نہیں آتا لہٰذا حکومت خود قلت پر قابو پاسکتی ہے۔

درخواست گزار نے موقف اختیار کیا کہ ہر وقت کرونا وائرس کے پھیلاو سے متعلق خبریں نشر ہونے سے عوام میں پریشانی بڑھ گئی ہے لہٰذا میڈیا کو اصلاحی پیغامات نشر کرنے کا حکم دیا جائے۔ کرونا وائرس قابل علاج مرض ہے اتنا خوفناک نہیں جتنا پیش کیا جا رہا ہے۔

درخواست گزار کے مطابق کرونا وائرس کے پھیلاؤ اور افراتفری کے ماحول میں ماسک کی قلت پیدا ہوگئی ہے۔

جسٹس محمد علی مظہر نے ریمارکس دیے کہ میڈیا کو خبریں نشر کرنے سے کیسے منع کرسکتے ہیں؟ میڈیا وہی رپورٹ کر رہا ہے جو ہو رہا ہے۔ کرونا وائرس سے متعلق کونسی سنسنی پھیلائی جا رہی ہے؟ بس یہی تو بتایا جا رہا ہے کہ وائرس کتنا خطرناک ہے۔

سماعت مکمل ہونے پر عدالت نے فریقین کو نوٹس دیتے ہوئے 6 مارچ تک جواب جمع کرانے کا حکم دے دیا۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube