ہوم   > پاکستان

امریکاطالبان امن معاہدے کاخیرمقدم کرتےہیں،وزیراعظم

SAMAA | - Posted: Mar 1, 2020 | Last Updated: 3 months ago
Posted: Mar 1, 2020 | Last Updated: 3 months ago
فائل فوٹو

پاکستان کے وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ امریکا اور طالبان کے درمیان ہونے والے امن معاہدے کا خیر مقدم کرتے ہیں۔ فریقین یقینی بنائیں کہ معاہدے کو سبوتاژ کرنے کے خواہاں عناصر موقع نہ پاسکیں۔

سماجی رابطے کی سائٹ پر اپنے تاریخی معاہدے پر ردعمل دیتے ہوئے وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ دونوں فریقین کے درمیان ہوالے تاریخی معاہدے کا خیر مقدم کرتے ہیں۔ امن اور مفاہمتی عمل کا آغاز ہے۔

عمران خان نے لکھا کہ ہمیشہ کہا کہ افغانستان کا امن مذاکرات سے ممکن ہے۔ افغان معاملے کے سیاسی حل پرزوردیا۔ فریقین یقینی بنائیں کہ معاہدے کو سبوتاژ کرنے کے خواہاں عناصر موقع نہ پاسکیں، میری دعائیں افغان عوام کے ساتھ ہیں جنہوں نے گزشتہ 4 دہائیاں خونریزی کے دوران گزاریں۔

وزیراعظم کا مزید کہنا تھا کہ پاکستان، افغانستان میں قیام امن کے لیے اس معاہدے کی بقا و کامیابی میں اپنا حصہ ڈالنے کیلئے مکمل پرعزم اور تیار ہے۔ میرا ہمیشہ سے یہ مؤقف رہا ہے کہ کتنی ہی پیچیدہ صورت حال کیوں نہ ہو، امن کا معنی خیز دروازہ سیاسی حل ہی سے کھلتا ہے۔

دوسری جانب وفاقی وزیر سائنس اینڈ ٹیکنالوجی فواد چوہدری کا کہنا ہے کہ امن مذاکرات سے عمران خان کے مؤقف کی جیت ہوئی، افغانستان میں امن سے پاکستان میں بھی امن ہوگا، طالبان اور امریکا مذاکرات سے خطے میں استحکام آئے گا۔ عمران خان نے ہمیشہ مذاکرات پر زور دیا۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube